جہلم

جہلم کی سڑکوں پر چنگ چی رکشہ ڈرائیورز انسانی زندگیوں کے لئے چلتی پھرتی موت کا باعث بننے لگے

جہلم: شہر اور گردونواح کی سڑکوں پر چنگ چی رکشہ ڈرائیورز انسانی زندگیوں کے لئے چلتی پھرتی موت کا باعث بننے لگے۔

شہر اور گردونواح میں چنگ چی رکشوں کی تعداد سینکڑوں سے کئی گنا تجاوز کر چکی ہے اور اس میں ہر گزرتے دن کے ساتھ تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے چنگ چی رکشہ چلانے والوں کی زیادہ تر تعداد نو عمر اور ادھیڑ عمر بزرگوں کی ہے جن کے پاس ڈرائیونگ لائسنس بھی نہیں اور نظر بھی کمزور ہے۔

شہر بھر میں جگہ جگہ چنگ چی رکشاؤں کے غیر قانونی اڈے بھی ٹریفک کے بہاؤ میں مشکلات پیدا کر رہے ہیں قانون سے ناواقف یہ کم عمر چنگ چی رکشہ ڈرائیور اس تیز رفتاری سے چنگ چی رکشے چلاتے ہیں جونہی کوئی سواری ہاتھ کھڑا کرے تو بغیر اِدھراُدھر دیکھے اچانک بریک لگا لیتے ہیں اوراکثراوقات سواری کے لالچ میں یہ دوسروں کی زندگیاں بھی یا تو چھین لیتے ہیں یا انہیں زندگی بھر کے لئے معذور بنا دیتے ہیں۔

ٹریفک پولیس کے افسران و اہلکاروں نے چنگ چی رکشہ ڈرائیورز کے دباؤمیں آکر کم عمر رکشہ ڈرائیوروں اور عمر رسیدہ بزرگ رکشہ ڈرائیوروں کو کھلی چھوٹ دے رکھی ہے جس کی وجہ سے حادثات روزانہ کا معمول بنتے جا رہے ہیں۔

شہریوں نے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر جہلم ڈی ایس پی ٹریفک سے کم عمر اور ادھیڑ عمر بزرگ رکشہ ڈرائیوروں کے خلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button