جہلماہم خبریں

جہلم میں کالج کی طالبہ سے زیادتی اور ویڈیو بنا کر بلیک میل کرنے والے 2 ملزمان کو عمر قید کی سزا

جہلم: کالج کی طالبہ سے زبردستی زیادتی اور ویڈیو بنا کر بلیک میل کرنے کے کیس میں ایڈیشنل سیشن جج شہباز حسین نے جرم ثابت ہونے پر دو ملزمان کو عمر قید اور 10 لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنا دی۔

رپورٹ کے مطابق گزشتہ سال ملزمان عثمان الحق ولد فضل الحق ساکن مائر سوہاوہ اور محمد سعید ولد میراں بخش ساکن ضلع راولپنڈی نے جہلم کے نجی کالج کی طالبہ (ع ش) کو ایف آئی میں نوکری کا جھانسہ دیکر اغواء کرکے زبردستی زیادتی کا نشانہ بنایا اور برہنہ حالت میں ویڈیو بنا کر بلیک میل کرکے متاثرہ طالبہ اور اسکی والدہ کے جوائنٹ اکاؤنٹ سے بھتہ کی مد میں مختلف اوقات میں اپنے اکاؤنٹ میں نو لاکھ ترانوے ہزار روپے ٹرانسفر کروائے جبکہ بلیک میل کرکے طالبہ سے پندرہ تولے طلائی زیورات بھی ہتھیا لیے۔

ملزمان متاثرہ طالبہ کو دوبارہ اغواء کرکے روات لے گئے جہاں دوبارہ زبردستی زیادتی کرکے ویڈیو بنائی اور نجی بینک کے چیک ہتھیا لیے جبکہ طالبہ کے نام سم خرید کر ایک اور نجی بنک میں اکاؤنٹ کھلوا کر چیک بک اور اے ٹی ایم اپنے پاس رکھ لیے اور خود استعمال کرتے رہے۔

ویڈیوز ڈیلیٹ کرنے اور چیک بک واپس کرنے کے لیے ملزمان نے طالبہ کے والد سے چار لاکھ بھتہ وصول کیا لیکن نہ چیک واپس کیے نہ ویڈیو ڈیلیٹ کی، طالبہ نے مجبور ہو کر تھانہ صدر میں مقدمہ درج کروایا،پولیس نے ملزمان کو گرفتار کرکے طالبہ سے ہتھیائے گئے طلائی زیورات، 9 لاکھ 93 ہزار نقدی، چیک بک اور دیگر دستاویزات برآمد کر کے ملزمان کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیجا۔

ایڈیشنل سیشن جج شہباز حسین کی عدالت میں مقدمے کا ٹرائل ہوا،استغاثہ کی طرف سے چوہدری لطیف ایڈووکیٹ جبکہ ملزمان کی طرف سے راجہ ظفر ایڈووکیٹ اور عثمان خالد نے کیس کی پیروی کی، بعد از سماعت جرم ثابت ہونے پر ایڈیشنل سیشن جج جہلم شہباز حسین نے ملزمان عثمان الحق اور محمد سعید کو عمر قید اور دس لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنا دی ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button