سوہاوہاہم خبریں

منشیات کی ایف آئی آر درج کرنے پر خواتین کا سوہاوہ پولیس کیخلاف احتجاج، قرآن پاک اٹھائے عدالت پہنچ گئیں

سوہاوہ: منشیات کی ایف آئی آر درج کرنے پر تھانہ سوہاوہ پولیس کے خلاف لواحقین کا احتجاج، خواتین قرآن اٹھائے پہلے تھانے اور پھر عدالت کے باہر پہنچ گئیں، پولیس تھانہ سوہاوہ اور خواتین آمنے سامنے کچہری داخلے سے روکنے کی کوشش، جوڈیشل مجسٹریٹ کی عدالت کے باہر لواحقین کا احتجاج، پولیس کے خلاف نعرے بازی، ملزم طاہر بٹ کے خلاف منشیات کے درجنوں مقدمات درج ہیں۔پولیس

تفصیلات کے مطابق پولیس تھانہ سوہاوہ نے طاہر بٹ کو منشیات کے مقدمہ میں گرفتار کیا تو لواحقین نے سوہاوہ پولیس کے خلاف احتجاج شروع کر دیا، خواتین نے تھانہ سوہاوہ اور کچہری میں پولیس کے خلاف شدید احتجاج کیا اور نعرے بازی، پولیس نے کچہری کے گیٹ پر لواحقین کو روکنے کی کوشش کی، لواحقین قرآن ہاتھ میں اٹھا کر حلف دیتے رہے، خواتین کی دہائی، جوڈیشل مجسٹریٹ کو درخواست دے دی گئی۔

لواحقین نے کہا کہ ہمارا جرم صرف اتنا ہے کہ طاہر بٹ نے ماضی کے گناہوں سے توبہ کی اور منشیات فروشوں کی نشاندہی کرتا ہے۔ سابقہ ریکارڈ کو جواز بنا کر ایک ایسے شخص پر مقدمہ درج کر دیا گیا جس نے منشیات فروشی سے توبہ کر لی اس سے پہلے بھی مقدمہ میں با عزت بری ہوئے ہم ہر جگہ احتجاج کریں گے اور ہر فورم کر آواز اٹھائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ پولیس نے ہمارے والد کو نماز کے بعد مسجد کے باہر سے گرفتار کیا، گلی محلوں میں سر عام منشیات فروخت کرنے والوں کو پولیس پوچھتی نہیں، ہم جمعرات کو ڈی پی او آفس کے باہر بھی احتجاج کریں گے۔ منشیات فروشوں کی نشاندہی کے باوجود پولیس منشیات فروشوں کو نہیں پکڑتی۔

اس حوالے سے ترجمان جہلم پولیس نے بتایا کہ ملزم طاہر بٹ کے خلاف منشیات کے درجنوں مقدمات درج ہیں، ملزم گھر کی کھڑکی سے منشیات فروخت کر رہا ہے ۔ ملزم کے خلاف پولیس کے پاس ٹھوس خواہد موجود ہیں، لواحقین نے ڈی پی او جہلم کو درخواست دی تو میرٹ پر انکوائری بھی ہو گی ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button