پاکستانی سائنس دان کی سربراہی میں شاہ سعود یونیورسٹی کی ایجاد امریکا نے تسلیم کرلی

سعودی عرب کی شاہ سعود یونیورسٹی کو ایک پاکستانی سائنس دان کی تیار کردہ ایجاد کی بنیاد پر امریکا میں پیٹنٹ مل گیا ہے۔ جس ایجاد پر پیٹنٹ ملا ہے وہ محفوظ بایو میٹرک شناخت کے نفاذ کے طریقے اور نظام سے متعلق ہے۔

پاکستان کے ڈاکٹر محمد خرم خان کی زیرقیادت سعودی عرب کے نیشنل پلان برائے سائنس و ٹیکنالوجی کے تحقیقاتی فنڈ کے ذریعے یہ بایو میٹرک سسٹم تیار کیا گیا ہے۔

شاہ سعود یونیورسٹی کی ویب سائٹ نے بتایا ہے کہ ڈاکٹر محمد خرم خان، ڈاکٹر ایل لینگ اور پی ایچ ڈی کے طالب علم ڈیبلیو ٹینگفی نے مصنوعی ذہانت کی مدد سے بایو میٹرک شناخت کا بہترین طریق کار ایجاد کیا ہے۔

اس ایجاد کو کمپیوٹر کی دنیا میں گیم چینجر کی حیثیت حاصل ہوئی ہے۔ اس میں ہیشنگ نیٹ ورکنگ استعمال ہوتی ہے۔

ڈاکٹر خرم خان کمپیوٹر سائنس کے میدان میں سعودی عرب کے تیسرے اور دنیا بھر میں 14 ہزار 402 سائنس دانوں میں 761 ویں نمبر پر ہیں۔ وہ شاہ سعود یونیورسٹی کے سینٹر آف ایکسی لینس ان انفارمیشن ایشورنس میں سائبر سیکیورٹی سے منسلک ہیں اور انھیں دنیا کے بہترین کمپیوٹر سائنس دان کے اعزاز سے بھی نوازا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button