جہلم

مہنگائی کی لہر جاری، پرائس کنٹرول مجسٹریٹس غائب، شہری گراں فروشوں کے ہاتھوں لٹنے پر مجبور

جہلم: مہنگائی کی لہر جاری، پرائس کنٹرول مجسٹریٹس غائب، شہری گراں فروشوں کے ہاتھوں لٹنے پر مجبور، صارفین نے وزیراعلیٰ پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق شہر سمیت ضلع بھرمیں مرغی کا گوشت فروخت کرنے والے دکانداروں نے سرکاری نرخ 384 روپے کی بجائے ساڑھے 7 سوگرام گوشت520 روپے میں فروخت کرنا شروع کر رکھا ہے جبکہ چینی کا سرکاری ریٹ 85 روپے مقرر کر رکھا ہے جبکہ دکانداروں نے 105 روپے فی کلو چینی فروخت کرنی شروع کر رکھی ہے۔

100 گرام روٹی کا سرکاری ریٹ 12 روپے مقرر ہے جبکہ نان بائی20 روپے میں 80/90 گرام روٹی فروخت کر رہے ہیں، 120 گرام نان کا سرکاری ریٹ 18روپے مقرر ہے جبکہ نان بائی 20 روپے میں فروخت کررہے ہیں، لیموں چائنہ 80 روپے کی بجائے 90 روپے فی کلو گرام، سبز مرچ فارمی 330 روپے کی بجائے 350 روپے، شملہ مرچ 275 روپے کی بجائے 320 روپے کلو، انڈے 232 روپے کی بجائے 240 روپے درجن فروخت کئے جارہے ہیں جس کی بنیادی وجہ پرائس کنٹرول مجسٹریٹس کا غیر فعال اور شہریوں کے مسائل سے عدم دلچسپی ہے۔

شہریوں نے وزیراعلیٰ پنجاب، چیف سیکرٹری پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ پرائس کنٹرول مجسٹریٹس کو روزانہ کی بنیاد پر شہر اور مضافاتی علاقوں کے دکانداروں کو چیک کرنے کا پابند بنایا جائے تاکہ گراں فروشی کے مرتکب دکانداروں کے خلاف سرکاری مشینری متحرک ہو ، غریب متوسط طبقہ سے تعلق رکھنے والے افراد اپنے بچوں کو 2 وقت کی روٹی مہیا کر سکیں ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button