عام انتخابات: ضلع جہلم کی ہر نشست پر کانٹے دار مقابلوں کا امکان ہے، امجد بٹ

جہلم کے معروف سینئر صحافی و کالم نگار محمد امجد بٹ نے بتایا کہ آٹھ فروری کے انتخابات کیلئے 22 دسمبر کاغذات نامزدگی داخل کرانے کا آخری دن ہے اور اس حوالے سے جمعرات کے روز بیشتر سیاسی جماعتوں کے سر کردہ امیدوار چھوٹے بڑے جلوس لیکر اپنے کاغذات نامزدگی داخل کرائے، ضلع کچہری پہنچے جس پر یقیناً انتخابی اور سیاسی گہما گہمی میں اضافہ ہوگیا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ حلقہ این اے 60 ، پی پی 25 کے کاغذات نامزدگی ضلع کچہری جہلم میں داخل کروائے گئے جبکہ حلقہ پی پی24 کے تحصیل سوہاوہ، اور حلقہ این اے 61اور پی پی26 کے کاغذات نامزدگی پنڈدادنخان کچہری میں داخل کروائے گئے ، کسی بھی سیاسی جماعت کی طرف سے ابھی تک ٹکٹوں کا واضح اعلان سامنے نہیں آسکا جس کی وجہ سے ووٹرز میں تجسس اور غیر یقینی صورتحال بدستور موجود ہے۔

سینئر صحافی و کالم نگار امجد بٹ کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ ن کو ٹکٹوں کی تقسیم میں مشکلات کا سامنا ہے جبکہ پی پی پی کو اپنے پینل کی تشکیل اور مضبوط امیدواروں کی تلاش کا سلسلہ جاری ہے کیونکہ پی پی پی کی قیادت عرصہ دراز سے زیر زمین ہے اور متوقع امیدوار بھی ابھی تک اس طرح منظر عام پر نہیں آئے جس طرح سیاسی جماعتوں کے قائدین پنڈال میں موجود ہوتے ہیں ۔ تاہم یہی صورتحال پی ٹی آئی کی بھی ہے ۔

سینئر صحافی محمد امجد بٹ نے بتایا کہ بہر حال پی ٹی آئی کے امیدواروں کے میدان میں آجانے سے تھوڑی ہلچل ضرور پیدا ہوسکتی ہے کیونکہ دو تین روز قبل تک ضلع بھر میں ہر طرف مسلم لیگ ن ہی نظر آتی تھی بہر حال ہر نشست پر کانٹے دار مقابلوں کا امکان ہے۔

سینئر صحافی محمد امجد بٹ نے بتایا کہ مسلم لیگ ن کے ٹکٹ کیلئے امیدواروں کی تعداد زیادہ ہے مگر توقع ہے کہ مسلم لیگ ن کی مرکزی قیادت مسلم لیگ ن کے ضلعی قائدین کو انتہائی مہارت کے ساتھ ایڈجسٹ کرنے میں کامیاب ہو جائے گی۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button