لندن میں مسلسل مظاہروں نے پولیس فنڈنگ میں خلا پیدا کردیا، صادق خان

لندن کے میئر صادق خان نے کہا ہے کہ لندن میں مسلسل مظاہروں نے میٹرو پولیٹن پولیس کے فنڈز کو متاثر کیا ہے اور پولیس کو فنڈ کی شدید کمی کا سامنا ہے۔

صادق خان نے وزیر داخلہ جیمز کلیوری کے نام خط میں لکھا ہے کہ مسلسل مظاہروں کی وجہ سے پولیس کو کم و بیش240ملین پونڈ کی کمی کا سامنا ہے۔ اس لیے پولیس کے لیے مزید فنڈز فراہم کیے جائیں تاکہ دارالحکومت میں پولیسنگ کا نظام مناسب طریقے سے چلتا رہے۔

انہوں نے لکھا ہے کہ دارالحکومت کو مظاہروں، کھیلوں کے ایونٹس، کلچرل فیسٹیولز اور دیگر ایونٹس کی وجہ سے منفرد انداز کے دباؤ کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ پولیس کی فنڈنگ میں کمی کے سبب لندن کی کمیونٹیز کو براہ راست نقصان پہنچ رہا ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی ہے کہ وزیر داخلہ فنڈنگ پر غور کریں گے۔

صادق خان نے وزیر داخلہ کے نام خط میں پولیس کمشنر کے اس بیان کا حوالہ دیا ہے، جس میں انہوں نے کہا تھا کہ مظاہروں اور ان پر نظر رکھنے کی ضروریات کے تحت28ہزار افسران کو شفٹ میں رکھا گیا تھا۔ جبکہ فلسطینیوں کی حمایت میں ایک لاکھ سے زیادہ مظاہرین شریک ہوئے، جس کی وجہ سے ایک ہزار پولیس اہلکاروں کو تعینات کرنا پڑا۔

اسکاٹ لینڈ کا کہنا ہے کہ صرف اسٹاپ آئل کا مظاہرین سے نمٹنے کے لیے پولیس پر 9 اعشاریہ 19 ملین پونڈ خرچ کرنا پڑے۔ میٹرو پولیٹن پولیس پر اضافی بوجھ سے پولیس افسران کی اپنی صحت پر منفی اثرات مرتب ہورہے ہیں۔

میئر صادق خان کا کہنا ہے کہ میٹ پولیس نے اسے آرام کے مجموعی طور پر کم و بیش4ہزار دن اور سرکاری تقریبات منسوخ کیں اور تقریباً ہر افسر7اکتوبر سے اختتام ہفتہ کام کررہا ہے، جس کی وجہ سے ان کے بیمار پڑنے کی شرح میں اضافہ ہورہا ہے اور یہ صورت حال برقرار رہتی نظر آرہی ہے۔

انہوں نے لکھا ہے کہ صرف میٹ پولیس ہی مالی مشکلات کا شکار نہیں ہے بلکہ اسکاٹ لینڈ کی پولیس بھی، جس کو اسکاٹ لینڈ حکومت فنڈ فراہم کرتی ہے، فنڈنگ کی کمی کا شکار ہے اور اس نے متنبہ کیا ہے کہ فنڈ کی کمی کے سبب اب اسے کم و بیش1500کی نفری کم کرنا پڑے گی۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button