جہلماہم خبریں

آرمی ایکٹ میں تبدیلی سے اداروں کو نقصان پہنچنے کا خطرہ ہے، عمران خان

جہلم: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ ہم اسلام آباد کی طرف اس لیے جا رہے ہیں کہ ہم یہ احتجاج کریں کہ ہم بھیڑ بکریاں نہیں انسان ہیں اور امر بالمعروف پر کھڑے ہیں کہ اگر اس طرح کے چور ملک پر مسط کیے گئے ہیں تو اس پر احتجاج کریں۔

انہوں نے ویڈیولنک پر جہلم میں لانگ مارچ کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ گھڑی فروخت کی رسدیں اور سارا ریکارڈ توشہ خانہ میں پڑا ہوا ہے، کردار کشی کرنے پر میڈیا گروپ جیوٹی وی اور عمر فاروق کو لندن دبئی اور پاکستان کی عدالت میں لے کر جاؤں گا،ان کی عقل پر حیران ہوں کل ایک فراڈ شخص کو پکڑا جس پر کیسز ہیں، وہ کہتا کہ عمران خان نے گھڑی فروخت کی ہے۔

عمران خان نے کہا کہ ملک کو دلدل سے نکالنے کا ایک ہی راستہ ہے الیکشن، لیکن نوازشریف اور زرداری ڈرے ہوئے ہیں کہ الیکشن ہوئے تو یہ ہار جائیں گے۔ یہ اپنے آپ کو بچانے کیلئے ملک کو تباہی کی طرف لے کر جارہے ہیں۔ اسی لیے کہتا ہے قومی سلامتی کی اہم پوزیشن ہے،نوازشریف باہر بیٹھا ہوا ہے، بچے باہر ہیں، پھر سوچیں اس کو کتنی فکر ہوگی کہ فیصلہ میرٹ پر ہو، نوازشریف نے زندگی میں کبھی میرٹ پر کام نہیں کیا۔
آرمی ایکٹ میں تبدیلی سے اداروں کو نقصان پہنچنے کا خطرہ ہے، عمران خان
چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ حکومت نے آرمی ایکٹ میں تبدیلی لانے کا فیصلہ کیا ہے، میں ان کی بات نہیں کررہا جنہوں نے لگنا ہے، میں لگانے والوں کی بات کررہا ہوں جنہوں نے لگانا ہے، کیونکہ انہوں نے ساری زندگی صاف نیت سے کوئی کام نہیں کیا، پیسا بنانے اور پھر چوری بچانے کا فوکس ہے، ان کا ہر کام ذاتی مفاد ہوتا ہے، اگر یہ تعیناتی کریں گے تو مطلب یہ اداروں کو نقصان پہنچا رہے ہیں۔ 1993 میں رپورٹ ہے کہ مجرموں کو پولیس میں بھرتی کیا، ہم سمجھتے ہیں تقرری صرف میرٹ پر ہونی چاہیے جو ملک کے مفاد میں ہو۔

انہوں نے کہا کہ میں جب سے حکومت میں گیا ہوں میرے خلاف مہم چلا ئی جا رہی ہے، میرے خلاف مہم جنگ جیو اور حکومت مل کر بناتی ہے، پہلے فارن فنڈنگ کا کیس بنایا، ہم ساری چیزوں کو ریکارڈ دیتے ہیں پھر ایف آئی اے کو چھوڑ دیتے ہیں۔ اب توشہ خانہ سامنے آگیا ہے، جس کو الیکشن کمشنر نے اٹھا دیا۔ یہ نہیں پتا کہ نوازشریف اور یوسف رضا گیلانی کا کیس نیب میں ہے، انہوں نے توشہ خانہ سے گاڑیاں نکالیں، جبکہ اگر کوئی چیز نکالنی ہو تو اس کا پیسے دینے پڑتے ہیں۔


عمران خان نے کہا کہ کل جیو اور ن لیگ نے مل کر ایک فراڈ کو پکڑا۔ یہ جس آدمی کو لے کر آئے سوشل میڈیا نے سب بتا دیا کہ اس پر کیسز ہیں، ناروے سے بھاگا ہوا ہے، اس کے اوپر کتنے کیسز ہیں، ایف آئی اے میں کیس ہے،اس نے کہا کہ عمران خان نے اتنے کی گھڑی فروخت کی ان کی عقل پر حیران ہوں کہ توشہ خانہ میں گھڑی فروخت کا سارا ریکارڈ پڑا ہوا ہے۔ لیکن انہوں نے ساری پروپیگنڈا مہم چلائی۔

انہوں نے مزید کہا کہ میں فیصلہ کیا ہے کہ میں نے الیکشن کمشنر پر بھی ہرجانہ کرنا تھا،افسوس سے کہتا ہوں مجھے اپنے انصاف کے نظام پر امید نہیں ہے۔جنگ جیو پر لندن میں کیس کروں گا، عمر فاروق اور جیو جنگ میں دبئی میں بھی کیس کروں گا، ان کو عدالت میں لے کر جاؤں گا، کیونکہ یہ میڈیا گروپ پروپیگنڈا کرتا ہے۔

عمران خان نے کہا کہ قوم تیاری کرے ایک یا 2 دنوں کے اندر بتاؤں گا کہ کس دن ہم سب کو وہاں جمع ہونا ہے۔ راولپنڈی میں جمع ہونے کے بعد آئندہ کی حکمت عملی تشکیل دیں گے مگر جو بھی منصوبہ ہوگا پرامن ہوگا، آئینی حدود میں ہوگا اور ہم کسی قسم کی قانونی خلاف ورزی نہیں کریں گے۔

عمران خان نے کہا کہ اگر اس ملک میں سپریم کورٹ سے سابق وزیر اعظم، ملک کے سب سے بڑے صحافی اور ایک سینیٹر کو انصاف نہیں مل سکتا تو کسی اور کو تو انصاف ملنے کا کوئی آسرہ ہی نہیں۔ عام آدمی کو طاقتور کے سامنے انصاف کی کوئی امید ہی نہیں تو یہ معاملہ ہمارے ملک کے لیے فیصلہ کن ہے اور ہم گزارش کرتے ہیں کہ انصاف دے کر اس ملک کو حقیقی طور پر آزاد کریں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button