جہلم میں مہنگائی عروج پر، پرائس کنٹرول مجسٹریٹس شہریوں کو ریلیف فراہم کرنے میں ناکام

جہلم شہر سمیت ملحقہ علاقوں میں مہنگائی عروج پر، پرائس کنٹرول مجسٹریٹس شہریوں کو ریلیف فراہم کرنے میں ناکام، شہریوں کا بازاروں سے دالیں، سبزیاں سرکاری نرخناموں کے مطابق خریدنا محال ہو کر رہ گیا۔

دکانداروں نے بازاروں،مارکیٹوں میں پھلوں اور سبزیوں کے من مانے نرخوں پر فروخت شروع کررکھی ہے جس کی وجہ سے دکانداروں اور گاہکوں کے درمیان توں تکرار بھی روزانہ کا معمول ہے۔

سرکاری نرخنامے میں آلو کچا چھلکا نیا درجہ اول کی قیمت 62 روپے مقررہے تاہم دکانداروں نے 80 روپے فی کلو میں فروخت کررہے ہیں۔پیاز درجہ اول 158 کی بجائے 190 ، ٹماٹر درجہ اول 100 کی بجائے 150 روپے ، لہسن دیسی 270کی بجائے 330 روپے، لہسن چائنہ 590 کی بجائے 630 روپے کلو فروخت کررہے ہیں۔

پرائس کنٹرول مجسٹریٹس گراں فروشوں کے خلاف کارروائیاں کرنے کی بجائے دفتروں میں بیٹھ کر جمع تقسیم کرکے سب اچھا ہے کی رپورٹس بھجوانے میں مصروف ہیں۔

شہریوں نے نگران وزیراعلیٰ پنجاب، چیف سیکرٹری پنجاب، کمشنر راولپنڈی اور ڈپٹی کمشنر سے گراں فروشوں کے خلاف فوجداری مقدمات درج کرنے اور حکومت کے مقرر کردہ نرخوں پر اشیاء خوردونوش فروخت کروانے کا مطالبہ کیاہے ۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button