بندہ مومن کو جب مضبوط تعلق مع اللہ نصیب ہو جائے تو وہ ہر شے سے مستغنی ہو جاتا ہے، امیر عبدالقدیر اعوان

امیر عبدالقدیر اعوان نے کہا کہ والدین بھی اگر دین کے خلاف حکم دیں تو نہیں ماننا چاہیے لیکن حسنِ معاشرت کے تحت ان کی خدمت اور اطاعت کی جائے اور جب بڑھاپے کو پہنچ جائیں تو ان کے ساتھ انتہائی شفقت اور پیار سے پیش آیا جائے ان کے سامنے اُف تک نہ کیا جائے۔

امیر عبدالقدیر اعوان شیخ سلسلہ نقشبندیہ اویسیہ و سربراہ تنظیم الاخوان پاکستان نے 2 روزہ ماہانہ روحانی اجتماع کے موقع سالکین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اپنے کسی عمل میں شرک کو نہ آنے دیا جائے چاہے وہ ظاہری ہو یا شرکِ خفی ہو۔اللہ کریم نہاں خانہ دل سے اُٹھنے والے خیالات تک کو بھی جانتے ہیں، ہر ایک کو اپنے ہر عمل کا روز محشر حساب دینا ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ نماز کا پابندی بندہ مومن میں یہ وصف پیدا کرتی ہے کہ وہ نیکی کا حکم دیتا ہے اور برائی سے روکتا ہے ایسے بندے کو اللہ کریم آنے والی رکاوٹوں میں اللہ کریم صبر عطا فرماتے ہیں۔اس سب کا عملی طور پر بجا لانا ہمت کا کام ہے زمین پر اکٹر اور ضرور سے نہ چلا جائے کیونکہ اللہ کریم تکبر کرنے والے کو پسند نہیں فرماتے۔اللہ کریم ہر پہلومیں ہماری راہنمائی فرماتے ہیں۔یہ اللہ کریم کا احسان ہے کہ قرآن کریم عطا فرمایا۔اللہ کریم صحیح شعور عطا فرمائیں۔

آخر میں انہوں نے ملکی سلامتی اور بقا کی اجتماعی دعا بھی فرمائی۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button