جہلم

پتنگ بازی جان لیوا،غیر قانونی کھیل اور قانوناً جرم ہے۔ ایس ایچ او تھانہ سٹی عبدالرحمٰن

جہلم: ایس ایچ اوتھانہ سٹی عبدالرحمٰن نے کہا ہے کہ پتنگ بازی جان لیوا،غیر قانونی کھیل اور قانوناً جرم ہے، والدین اپنے بچوں کو اس غیر قانونی کھیل سے دور رکھنے میں اپنا کردار ادا کریں۔

تھانہ سٹی کے ایس ایچ او عبدالرحمٰن نے جہلم پریس کلب کے نمائندہ وفد سے غیر رسمی گفتگو کے دوران کہا کہ پتنگ بازی جیسے جان لیوا اور غیر قانونی کھیل کے حوالے سے جہلم سمیت پنجاب بھر میں سوشل میڈیا، پرنٹ و الیکٹرانک میڈیا کے ذریعے پنجاب پولیس نے آگاہی فراہم کی جس کا مقصد پتنگ بازی جیسے جان لیوا، غیر قانونی کھیل سے ہونے والے جانی نقصانات سمیت کھیل میں ملوث نوجوانوں کو قانون کی گرفت میں آنے پر فوجداری کارروائی سے انکے مستقبل پر پڑنے والے منفی اثرات سے آگاہ کرنا ہے۔

ایس ایچ او عبدالرحمن کا کہنا تھا کہ پتنگ بازی ایک غیر قانونی کھیل ہے اور قانوناً جرم ہے، اس کھیل میں استعمال ہونے والی قاتل ڈور سے جان لیوا حادثات جنم لیتے ہیں اور بعض اوقات شہریوں کی قیمتی جانیں بھی چلی جاتی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اس غیر قانونی کھیل میں ملوث نوجوانوں کو پکڑے جانے پر فوجداری کارروائی کا سامنا کرنے پر مستقبل میں سرکاری ملازمت کے حصول میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

ایس ایچ او نے کہا کہ میری تمام نوجوانوں سے گزارش ہے کہ وہ کسی ایسے غیر قانونی کھیل کا حصہ بالکل نہ بنیں جس سے دیگر شہریوں کی جان خطرے میں پڑے اور ان کے اپنے مستقبل کے لیے بھی نقصان دہ ہو، نوجوانوں کے والدین بالخصوص اپنے بچوں کو ایسے خونی، جان لیوا اور غیر قانونی کھیل سے دور رکھنے میں اپنا بھرپور کردار ادا کریں۔

انہوں نے کہا کہ تھانہ سٹی پولیس پتنگ بازی جیسے غیر قانونی کھیل میں ملوث افراد سمیت قاتل ڈور، پتنگوں کی خرید وفروخت میں ملوث افراد کے خلاف سخت کارروائیاں کرتے ہوئے بلا تفریق مقدمات کا اندراج کرے گی۔

انہوں نے شہریوں سے اپیل کی ہے کہ اس حوالے سے شہری پولیس کے ساتھ تعاون کریں اور اپنے ارد گرد کوئی بھی ایسی غیر قانونی سرگرمی دیکھیں تو فوری طور پر پولیس کو اطلاع دیں تاکہ اس جان لیوا خونی کھیل کا خاتمہ ممکن ہو سکے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button