جہلم

ٹریفک پولیس کی ڈیل یا ڈھیل، نئی تعمیر ہونے والی جہلم کی سڑکیں تباہ و برباد ہونے سے بچایا جائے۔ شہری حلقے

جہلم: ٹریفک پولیس کی ڈیل یا ڈھیل، نئی تعمیر ہونے والی شہر کی سڑکیں تباہ وبرباد ہونے سے بچایا جائے، اندرون شہر بھاری گاڑیوں کے داخلے پر سختی سے پابندی عائد کی جائے ، شہری متعلقہ محکموں کے خلاف سراپا احتجاج ہیں۔

تفصیلات کے مطابق قائم مقام ڈی ایس پی ٹریفک کی سر پرستی کی وجہ سے اندرون شہر کی سڑکوں پر بھاری گاڑیوں کے داخلے پر پابندی عائد نہ ہو سکی، جس کی وجہ سے اندرون شہر میں نئی تعمیر ہونے والی سڑکیں گڑھوں میں تبدیل ہورہی ہیں۔

دن اور رات کے اوقات میں تیز رفتارلوڈرز، ڈمپر، ٹرک،ٹریکٹر ٹرالیوں اور دیگر بھاری گاڑیوں کی آمدورفت جاری رہتی ہے جس کی وجہ سے جادہ چوک تا مشین محلہ نمبر1 تا ڈھوک جمعہ روڈ گڑھوں میں تبدیل ہو رہی ہیں جبکہ مشین محلہ نمبر 1 تا جادہ تک نئی تعمیر ہونے والی سڑک بھی بھاری گاڑیوں کی وجہ سے زمین میں دھنس رہی ہے۔

یہاں پر قابل زکر بات یہ ہے کہ ضلعی انتظامیہ نے شہر کے داخلی و خارجی راستوں پر بھاری گاڑیوں کے داخلے پر عائد پابندی کے بورڈ آویزاں کر رکھے ہیں جس پر ہدایات درج ہیں کہ اندرون شہر دن اور رات کے اوقات میں بھاری گاڑیوں کے داخلے پر سخت پابندی عائد ہے۔

ٹریفک پولیس، سیکرٹری ڈسٹرکٹ روڈ ٹرانسپورٹ اتھارٹی، تھانہ صدر، تھانہ سول لائن، تھانہ سٹی، موٹر وہیکل ایگزیمینر کی عدم دلچسپی کی وجہ سے شہر کی سڑکوں پر لوڈر ز، ڈمپرز و بھاری گاڑیاں دوڑتی نظرآتی ہیں جس کیوجہ سے سڑکیں ایک مرتبہ پھر ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہو رہی ہیں۔

شہریوں نے وزیراعلیٰ پنجاب، چیف سیکرٹری پنجاب، آئی جی پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ اندرون شہر بھاری گاڑیوں کے داخلے پرعائد پابندی پر عملدرآمد کو یقینی بنایا جائے تاکہ شہر کی سڑکوں کو محفوظ بنایا جا سکے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button