جہلم: کھادوں کی عدم دستیابی، فصلیں تباہی کے دہانے پر، کسان اور کاشتکار دربدر

جہلم: کھادوں کی عدم دستیابی کی وجہ سے فصلیں تباہی کے دہانے پر، کسان اور کاشتکار معیاری کھاد اور بیج کے حصول کے لئے دربدر، محکمہ زراعت کی کارکردگی سوالیہ نشان بن گئی۔

تفصیلات کے مطابق شہر سمیت ضلع بھر میں معیاری کھادوں اور بیجوں کی عدم دستیابی کی وجہ سے کسانوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ، بااثر کھاد ڈیلرزکھا د و بیج بلیک میں فروخت کرکے کسانوں کی مشکلات میں اضافے کا سبب بنے ہوئے ہیں جبکہ محکمہ زراعت کے ذمہ داران نے لوٹ مار کرنے والے بااثر ڈیلرز کو کھلی چھوٹ دے رکھی ہے۔

کسانوں کا کہنا ہے کہ کھادوں کی عدم دستیابی کی وجہ سے گندم کی فصل میں نمایاں کمی واقع ہوگی ، جس کی تمام تر ذمہ داری محکمہ ذراعت کے متعلقہ افسران پر ہے۔ اگر حکومت نے آنکھیں نہ کھولیں تو کسان فصلیں کاشت کرنے کی بجائے دوسرے کاموں میں مصروف ہو جائیں گے جس سے شہریوں کی مشکلات میں غیر معمولی اضافہ ہو گا۔

کسانوں نے نگران وزیراعلیٰ پنجاب سے مطالبہ کیاہے کہ معیاری زرعی بیج ، زرعی ادویات اور کھادوں کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے ضلع بھر میں بااثر کھاد و بیج ڈیلرز نے ناقص وغیر معیاری ملٹی نیشنل کمپنیوں کے ناموں سے ملتی جلتی ادویا ت اور بیج محکمہ زراعت کے افسران کی سرپرستی میں فروخت کرنے شروع کر رکھے ہیں جس کیوجہ سے کسان معاشی بدحالی کا شکارہو رہے ہیں ۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button