جہلماہم خبریں

ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ جرائم میں ملوث بڑے مگرمچھوں کو پکڑنے میں بری طرح ناکام

جہلم: ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ جرائم میں ملوث بڑے مگرمچھوں کو پکڑنے میں بری طرح ناکام، شہریوں کی شکایات کی شرح پچھلے سالوں کی نسبت کئی گنا بڑھ گئیں۔

غیر قانونی طریقے سے شہریوں کو موبائل فون ایپ کے انسٹال کی ترغیب’ ویب سائٹس کو متعارف کروا کر لوٹ مار کا بازار گرم کررکھا ہے، فراڈ میں ملوث گروہوں نے دھڑلے سے ویب سائٹس اور ایپس لانچ کر کے سادہ لوح افراد سے ماہانہ لاکھوں کروڑوںروپے اینٹھ رہے ہیں، لالچی افراد نوسر بازوں کے جھانسے میں آکر جمع پونجی لٹا رہے ہیں، موبائل فون سموں کی غیر قانونی فروخت پر بھی قابو نہیں پایا جا سکا۔

شہریوں کو لوٹنے کا سلسلہ جاری و ساری، سادہ لوح افراد کو مختلف پیغامات بھیج کر ان کی جمع پونجی بھی ہتھیائی جارہی ہے، آن لائن بنکنگ فراڈ’ نوکریوں کا جھانسہ دیکر سادہ لوح افراد سے لاکھوں بٹورنے والے مافیا زپر سائبر کرائم ونگ کی ٹیم ہاتھ ڈالنے کی بجائے مقدمات درج کر کے صرف انکوائریوں تک محدود رہی، ایف آئی اے کا متعلقہ شعبہ تفتیش پر ہی اکتفا کر کے شہریوں کو بے و قوف بنانے میں مصروف ہے۔

شہریوں نے راولپنڈی ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ کی کارکردگی کو انتہائی مایوس کن قرار دیتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ سائبر کرائم ونگ کی کارکردگی کو فوری طور پر موثر بنایا جائے، اس کی استعداد میں اضافہ کیا جائے جبکہ عام شہریوں کو ایف آئی اے کے دفاتر تک شکایات کی رسائی کیلئے ٹول فری نمبر کی تشہیر کو ممکن بنانے کیلئے اقدامات اٹھائے جائیںتاکہ جن شہریوں کو مشکلات کا سامنا ہو وہ باآسانی ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ تک رسائی حاصل کر سکیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button