کالج ٹیچنگ انٹرنز معاوضے سے محروم، نئے کالج ٹیچنگ انٹرنز کی بھرتی نہ ہو سکی، طلباء کا مستقبل خطرے میں

پڑی درویزہ: صوبہ پنجاب کے سرکاری کالجز میںتعلیمی سیشن2022-23کے دوران تعینات شدہ کالج ٹیچنگ انٹرنز کو تاحال معاوضہ ادا نہیں کیا گیا ۔ تعلیمی سیشن 2023-24میں سرکاری کالجز میں کالج ٹیچنگ انٹرنز بھرتی نہیں کیے گئے، لاکھوں طلباء و طالبات کا مستقبل خطرے میں پڑ گیا۔

تفصیلات کے مطابق صوبہ پنجاب بھر کے سرکاری کالجوں میں تعلیمی سال 2022-23کے دوران محدود مدتی عارضی اساتذہ ( کالج ٹیچنگ انٹرنز ) کو تاحال پورا معاوضہ ادا نہیں کیا گیا ۔ عوامی حلقوں کے مطابق یہ وہ مزدور ہیں جنہیں پسینہ تو آگیا لیکن تدریسی مزدوری کا تاحال معاوضہ ادا نہیں کیا جا سکا ۔

عوامی سماجی حلقوں کے مطابق حکومت پنجاب منصوبہ بندی کے مطابق سرکاری اعلیٰ تعلیم شعبہ کو رو بزوال رکھنا چاہتی محسوس ہوتی ہے کیونکہ موجودہ تعلیمی سال 2023-24کو شروع ہوئے عرصہ 6ماہ گزر چکے ہیں، لیکن سرکاری کالجوں میں خالی آسامیوں پر عارضی اساتذہ تک بھرتی نہیں کیے گئے اس کے نتیجے میں صوبہ بھر کے 700سے سے زائد کالجوں میں لاکھوں طلبا و طالبات کا مستقبل خدشے میں دکھائی دیتا ہے ۔

عوامی سماجی حلقوں نے نگران وزیر اعلیٰ پنجاب اور نگران وزیر تعلیم پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ بیان بالا دونوں مسائل پر غور کرتے ہوئے جلد از جلد حل کرنے کے مثبت اقدامات کیے جائیں تا کہ اعلیٰ تعلیم کے سرکاری اداروں میں پائی جانے والی محرومی دور ہو سکے اور معاوضہ سے محروم سابق کالج ٹیچنگ انٹرنز کو بھی معاوضہ ادا کر کے حساب بروقت بے باک کیا جائے ۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button