جہلم میں ڈاکٹروں کی غفلت کے باعث 9 سالہ بچے کی زندگی خطرے میں پڑ گئی

جہلم کے ڈی ایچ کیو اسپتال میں ڈاکٹروں کی غفلت اور لاپروائی کے باعث نو سالہ بچے اکرام کی زندگی خطرے میں پڑ گئی۔

اسلام پورہ کے رہائشی بچے کو اسکے دادا پیٹ میں تکلیف کے باعث ڈی ایچ کیو اسپتال جہلم میں لائے تو اپینڈیکس کے مرض میں مبتلا بچے کی مناسب دیکھ بھال نہ کی گئی۔

بچے کے دادا نے متعدد بار ایم ایس سرمد کیانی اور ڈاکٹروں کی آپریشن کے لیے منت سماجت کی لیکن بروقت آپریشن نہ کیا گیا۔ جب آپریشن کیا گیا تو گندگی پیٹ میں چھوڑ کر نالی لگا دی گئی جس سے بچے کی حالت خراب ہو گئی۔

بچے کا دادا جمیل بچے کو لے کر سی ایم ایچ گیا جہاں بچے کا آپریشن کرکے پیٹ کی صفائی کی گئی۔

بچے کے دادا نے ڈپٹی کمشنر اور مختلف پلیٹ فارمز پر غفلت کے مرتکب ڈاکٹروں کے خلاف درخواست دی جس کے بعد بااثر ڈاکٹروں نے سیاسی اور بااثر افراد کی سفارشیں کروانا شروع کردی ہیں،بچے کے دادا پر صلح کے لیے دباؤ ڈالا جارہا ہے۔

بچے کے دادا نے اعلی حکام سے غفلت کے مرتکب ڈاکٹروں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button