جہلم میں سڑکیں ، چوک چوراہے اور بازار قبضہ مافیا کو ٹھیکے پر دے دیے گئے

جہلم: میونسپل کمیٹی اور ٹریفک پولیس کے افسران نے سڑکیں ، چوک چوراہے اور بازار قبضہ مافیا کو ٹھیکے پر دے دیئے۔ چنگ چی رکشوں، لوڈر رکشوں ، ریڑھی بانوں سمیت دکانداروں نے پارکنگ والی جگہوں پر دکانیں سجا لیں جس کی وجہ سے شہریوں کو ٹریفک کی روانی میں شدید مشکلات درپیش ہیں۔

تفصیلات کے مطابق جہلم شہر کے عین وسط میں واقع شاندار چوک کے اردگرد ، سڑکوں، بازاروں میں تجاوزات بڑھنا شروع ہو چکی ہے جس کے باعث ٹریفک کی روانی بھی شدید متاثر ہوچکی ہے، جگہ جگہ سڑک کنارے چنگ چی رکشے ، لوڈرڈرائیورز و مالکان نے خود ساختہ رکشہ اسٹینڈ اور ریڑھی بانوں نے قبضے جما رکھے ہیں۔

ریلوے روڈ، تحصیل روڈ، سول لائن روڈ، مشین محلہ روڈ، چو ک گنبد والی مسجد، قبرستان چوک ،جادہ چوک ، محمدی چوک، روہتاس روڈ چوک سمیت اندرون شہر کے بازاروں میں عوام کا پیدل چلنا بھی مشکل ہو کر رہ گیاہے ۔ دکانداروں نے کئی کئی فٹ دکانوں کے باہر سڑکوں پر اپنی اشیاء سجا رکھی ہیں۔

خصوصاً مین بازار، کناری بازار، نیا بازار، دلہن بازار میں دکانداروں نے سڑکوں پر دکانیں سجا رکھی ہیں جن کو کوئی پوچھنے والا نہیں ٹریفک پولیس اہلکار دوران ڈیوٹی اپنے فرائض منصبی نظر انداز کرتے ہوئے خوش گپیوں میں مصروف دکھائی دیتے ہیں جس کی وجہ سے ٹریفک روانی کا نظام درہم برہم ہو کر رہ گیا ہے۔ شہر میں خریداری کے لئے آنے والی خواتین ، بچوں و شہریوں کاپیدل چلنا بھی دشوارہو چکا ہے۔

مشکلات سے دو چار شہریوں نے نگران وزیراعلیٰ پنجاب،چیف سیکرٹری پنجاب، آئی جی پنجاب، ڈی آئی جی ٹریفک پولیس، محتسب اعلیٰ پنجاب، صوبائی وزیر بلدیات اور ڈپٹی کمشنر سے اصلاح واحوال کا مطالبہ کیا ہے۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button