جہلم

سکیورٹی گارڈز کوئلہ فنڈز سے محروم، نجی اداروں کے سکیورٹی گارڈز سردیوں میں کانپنے لگے

جہلم: نجی اداروں کے سکیورٹی گارڈز سردیوں میں کانپنے لگے، سکیورٹی گارڈز کوئلہ فنڈز سے محروم، نامناسب تنخواہ، گزارہ مشکل، سکیورٹی گارڈز شدید ذہنی اذیت میں مبتلا ہونے لگے۔

سروے کے دوران سکیورٹی گارڈزنے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ آج کے معاشی بدحالی کے دور میں ہماری تنخواہیں انتہائی کم ہیں جبکہ ڈیوٹی کے اوقات سب سے زیادہ ہیں جس کی وجہ سے گزر بسر کرنا ہمارے لئے انتہائی مشکل ہو چکا ہے۔

سکیورٹی گارڈزنے بتایا کہ ہماری ڈیوٹیوں کے مطابق ہماری تنخواہیں انتہائی قلیل ہیں، انچارج صاحبان بااثر ہونے کی وجہ سے ملنے والے تنخواہوں میں سے بھی من مرضی کی کٹوتی کر لیتے ہیں لیکن ہماری داد رسی کرنے والا کوئی نہیں جس کی وجہ سے ہم کسمپرسی کی زندگی بسر کررہے ہیں بیوی بچوں کی مناسب دیکھ بھال بھی مشکل ہوچکی ہے، ہر ماہ قرضہ لیکر زندگی گزار رہے ہیں۔

سکیورٹی گارڈزنے مزید کہا کہ سردیوں کی راتیں اور صبح کے اوقات میں سخت سردی میں کھلے آسمان تلے ڈیوٹیاں سر انجام دیتے ہیں، ہمیں کوئلے کی مد میں کوئی فنڈ فراہم نہیں کیا جاتا اور نہ ہی ہمیں مالکان کی جانب سے آگ تاپنے کی اجازت دی جاتی ہے جس کے باعث ہم سردیوں کے موسم میں ہانپتے کانپتے اپنی ذمہ داریاں سرانجام دینے پر مجبور ہیں۔

سکیورٹی گارڈز نے حکومت وقت سے مطالبہ کیا ہے کہ نجی اداروں کے مالکان کو ہماری تنخواہیں بڑھانے اور سردیوں کے مہینے میں کوئلہ فراہم کرنے کے احکامات جاری کئے جائیں ہم بھی بہتر طریقے سے اپنی ڈیوٹیاں احسن طریقے سے سرانجام دے سکیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button