ہائے مہنگائی!، غریب و امیر کی چیخیں نکل گئیں، بیروزگاری میں بھی اضافہ

جہلم: ہائے مہنگائی!، غریب امیر کی چیخیں نکل گئیں، بکرے کا گوشت18 سو روپے کلو، بڑے گوشت کی قیمت 1 ہزار روپے،گھریلو گیس سلنڈر3500 روپے، کرایوں میں بھی ہوشربا اضافہ ،مہنگی بجلی ادویات کی قیمتیں بھی آسمان سے باتیں کرنے لگیں، چائے کا کپ50 سے 70 روپے میں فروخت ہونے لگا۔ لوٹ مار کا بازار گرم، خریداری کرنا محال، بیروزگاری میں بھی اضافہ ،جرائم بڑھنے لگے۔

تفصیلات کے مطابق مہنگائی کا زور نہ ٹوٹ سکا، پٹرول کی قیمتوں میں کمی کے باوجود بھی کھانے پینے کی اشیاء کی قیمتیں کم نہ ہو سکیں ٹرانسپورٹرز نے بھی انتظامیہ کی سرپرستی کیوجہ سے کرایوں میں کمی نہ کی جس کی وجہ سے لڑائی جھگڑے معمول بن گئے۔

دوسری جانب گوشت کی قیمتوں میں اضافہ مرغی کا گوشت فی کلو613 روپے سے 650 روپے میں فروخت ہو رہا ہے۔ شدید مہنگائی نے عام آدمی سے قوت خرید چھین لی، مہنگائی اور بیروزگاری کی وجہ سے جرائم بڑھ گئے۔

جہلم شہر سمیت ضلع بھر میں افراتفری کا ماحول ، نگران حکومتیں عوام کو ریلیف دینے میں نا کام جبکہ ضلع کی سیاسی جماعتیں الیکشن الیکشن کھیلنے میں مصروف ،عوام کو پس پشت ڈ ال دیا گیا ۔

مہنگائی میںپسی عوام نے کہا کہ حکمرانوں کو عوام کے مسائل سے کوئی دلچسپی نہیں، انکو اپنے اپنے مفادات اور چودھراہٹ عزیز ہے۔

جہلم شہر کی سماجی ، رفاعی ، فلاحی اور مذہبی شہری تنظیموں کے عمائدین نے کہا کہ سابق وفاقی حکومت میں مہنگائی مارچ کرنے والے سیاست دان ایک بار پھر سادہ لوح عوام کو بیوقوف بنانے کی غرض سے گلی محلوں اور شہروں میں گھس چکے ہیں ۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button