مسجد الحرام و مسجد نبوی ﷺ میں 3 مقامات پر آرام نہ کرنے کی ہدایت

مکہ مکرمہ: سعودی عرب نے زائرین کو مسجد الحرام اور مسجد نبوی ﷺ میں 3 مقامات پر آرام کرنے سے منع کردیا۔

تفصیلات کے مطابق سوشل میڈیا پلیٹ فارم ایکس پر جاری ایک بیان میں سعودی وزارت حج و عمرہ نے زائرین کو ہدایت کی ہے کہ مسجد الحرام اور مسجد نبوی ﷺ میں 3 مقامات پر آرام کی غرض سے قیام نہ کیا جائے، ان مقامات میں وہیل چیئر ٹریک، راہداریاں اور ایمرجنسی گزر گاہیں شامل ہیں، ان جگہوں پر سونے اور آرام کرنے سے گریز کیا جائے۔

وزارت حج و عمرہ کا کہنا ہے یہ پابندی زائرین کی سلامتی، نظام کی پابندی اور نماز و زیارت کے لیے آنے والوں کے سکون و اطمینان کے لیے لگائی گئی ہے کیوں کہ مسجد الحرام اور مسجد نبوی ﷺ میں سونا اور بستر لگانا زائرین کے لیے تکلیف کا باعث بنتا ہے۔

وزارت نے مزید کہا ہے کہ مسجد الحرام یا مسجد نبوی ﷺ میں سونے یا بستر لگانے سے دیگر زائرین کی سلامتی خطرے میں پڑ جاتی ہے، اس عمل سے آنے جانے کے راستوں میں رکاوٹ پیدا ہوتی ہے، رش بھی بڑھ جاتا ہے اور سلامتی کے تقاضے متاثر ہونے کے ساتھ راستے کا حق معطل ہوتا ہے۔

سعودی وزیرِ برائے حج و عمرہ ڈاکٹر توفیق الربیعہ نے بتایا ہے کہ 2023ء میں سہولیات میں اضافے کے باعث عمرہ زائرین کی تعداد 58 فیصد یعنی تقریباً 50 لاکھ افراد کے ریکارڈ اضافے کے ساتھ 1 کروڑ 35 لاکھ 50 ہزار تک پہنچ گئی جو سالانہ بنیاد پر اب تک کی زائرین کی سب سے زیادہ ہے۔

اس سے قبل 2019ء میں بیرون مملکت سے 85 لاکھ 50 ہزارعمرہ زائرین آئے تھے، عمرہ زائرین کی آمد کو آسان بنانے کے لیے 200 سے زائد نئے اقدامات کیے گئے ہیں، تمام خلیجی ممالک میں مقیم غیرملکیوں کو سعودی عرب آنے اور عمرہ کرنے کے لیے ای ویزے کی سہولت مہیا کردی گئی ہے جب کہ مکہ روٹ پراجیکٹ سے اب تک 8 ممالک کے 6 لاکھ 17 ہزار عازمین مستفید ہوچکے ہیں، حج 2024ء کے لیے 35 سے زائد کمپنیاں عازمین کو خدمات فراہم کریں گی۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button