امریکا؛ خاتون ٹیچر کا 17 سالہ طالبعلم سے 30 بار جنسی تعلق قائم کرنے کا اعتراف

واشنگٹن: امریکی عدالت میں سابق ٹیچر نے ہائی اسکول کے طالب علم کے ساتھ 2021 سے 2022 کے درمیان 30 بار جنسی تعلقات قائم کرنے کا اعتراف کرلیا جس پر انھیں عمر قید بھی ہوسکتی ہے۔

امریکی میڈیا کے مطابق ریاست آرکنساس کے ایک ہائی اسکول کی خاتون ٹیچر 33 سالہ ہیتھر ہیئر پر 17 سالہ طالب علم نے متعدد بار جنسی تعلقات قائم کرنے کا الزام لگایا تھا جب کہ وہ اس وقت نابالغ تھا۔

طالب علم جس کی شناخت اس کے نام کے مخفف ’’جے آر‘‘ سے ظاہر کی گئی نے گزشتہ برس اپنی خاتون ٹیچر پر 2021 سے 2022 کے درمیان متعدد بار جنسی تعلقات قائم کرنے کا الزام عائد کیا تھا جس پر پولیس نے 33 سالہ استانی ہیتھر ہیئر کو اپریل 2023 میں حراست میں لیا تھا۔

متاثرہ طالب علم نے پولیس کو بتایا تھا کہ خاتون ٹیچر سے 2021 میں سینئر ایئر کے پہلے دن ملاقات ہوئی تھی اور دو بدو ملاقاتوں کے بعد وہ انسٹاگرام اور اسنیپ چیٹ کے ذریعے بھی باتیں کرنے لگیں۔

متاثرہ طالب علم نے پولیس کو مزید بتایا کہ ایک دن ٹیچر نے کہا کہ میں نے خواب تمھارے ساتھ رات گزاری اور پھر وہ مجھے اس پر مجبور کرنے لگی اور کانوے کی رہائش گاہ، ان کی گاڑی، کلاس روم اور اسکول کی پارکنگ میں 30 بار جنسی تعلقات قائم کیے۔

طالب علم نے یہ بھی بتایا کہ ٹیچر نے 2022 میں اسکول کے سفر کے دوران بھی جنسی تعلقات قائم کرنے کا ارادہ ظاہر کیا لیکن میں نے پکڑے جانے کا خوف ظاہر کیا تو انھوں نے کہا کہ فکر مند مت ہو اور مجھے اپنے ہوٹل کے کمرے میں بلایا۔

طالب علم کے مطابق اب میں 18 سال سے زائد ہوگیا اور احساس ہوا کہ مجھے نابالغ ہونے پر استعمال کیا گیا جو کہ غیر قانونی عمل ہے اور میں نفسیاتی دباؤ کا بھی شکار رہا۔

خاتون ٹیچر نے آج ہونے والی سماعت میں اعتراف جرم کرلیا جس پر انھیں زیادہ سے زیادہ عمر قید یا کم سے کم 13 سال قید کی سزا ہوسکتی ہے۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button