جہلم میں مہنگائی کا جن بے قابو، دال سبزی بھی عام آدمی کی پہنچ سے باہر

جہلم: مہنگائی کا جن بے قابو، دال سبزی بھی عام آدمی کی پہنچ سے باہر، کون اس قوم کے دکھ کا مداوا کرے گا، شہری سراپا احتجاج ہیں۔

تفصیلات کے مطابق جہلم شہر سمیت ضلع بھر میں مہنگائی نے ایک الگ انداز اپنایا ہوا ہے ،نرخ نیچے نہیں آرہے اور نہ ہی انتظامیہ نرخوں کو نیچے لانے میں کردار ادا کر رہی ہے جو کہ انتظامیہ کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے. مٹر 300 روپے ، ٹماٹر150 روپے اور پیاز 250 روپے کلو پر براجمان ہیں کوئی پوچھنے والا نہیں کہ عام آدمی کا گزارا کیسے ہوگا۔

ایک شخص نے کہا کہ سیاسی نمائندگان ایک دوسرے پر الزام تراشیاں کرکے بازی لے جانے میں سبقت حاصل کررہے ہیں لیکن کوئی اس مہنگائی کی ذمہ داری لینے کو تیار نہیں ، جس کی وجہ سے غریب سفید پوش طبقہ سے تعلق کرنے والے افراد مہنگائی کی چکی میں پس رہے ہیں ۔

محنت کشوں کا کہنا ہے کہ حکومت جون میں بجٹ تیار کرکے اشیاء خوردونوش کی قیمتوں میں اضافہ کرتی ہے ، اس کے بعد ہر ماہ منی بجٹ کے ذریعے عوام کی چمڑیاں ادھیڑی جاتی ہیں جو کہ عوام کے ساتھ ظلم کے مترادف ہے ۔

شہریوں نے نگران وزیراعظم پاکستان سے مطالبہ کیاہے کہ مہنگائی کو قابو کیا جائے تاکہ غریب سفید پوش طبقہ سے تعلق رکھنے والے افراد خودکشیاں کرنے کی بجائے اپنے بچوں کو دو وقت کی روٹی مہیا کر سکیں ۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button