ریسکیو 1122 جہلم کی ماہ جنوری کی کارکردگی رپورٹ جاری، 1638 افراد کو ریسکیو کیا

جہلم: ریسکیو 1122 نے ماہ جنوری میں 7 اعشاریہ 4 منٹ کے ایوریج رسپانس ٹائم سے 1638 افراد کو ریسکیو کیا۔

ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسر ریسکیو 1122جہلم انجینئر سعید احمد کی صدرات میں ایک اجلاس ہوا جس میں ریسکیو 1122 کی ماہانہ کارکردگی کا جائزہ لیا گیا۔ریسکیو1122 جہلم نے بروقت رسپانس کرتے ہوئے مجموعی طور پر 1638 لوگوں کو ریسکیو کیا اور ابتدائی طبی امداد فراہم کرنے کے بعد 1206 مریضوں کو ہسپتال منتقل کیا۔

ماہ جنوری میں 6516 کالز موصول ھوئی جن میں 1680 ایمرجنسیز کالز پر بروقت ریسپانس کیا گیا۔ جن 1680 ایمرجنسیز کالز پر رسپانس کیا ان میں روڈ ٹریفک ایکسڈینٹ کی تعداد 228 تھی، میڈیکل ایمرجنسیز کی تعداد 1252 تھیں، آگ لگنے کا واقعات 21 ہوئے،کرائم 19 اور متفرق ایمرجنسیز کی تعداد 160 رہی۔

ماہ جنوری میں 228 روڈ ٹریفک کے حادثات ہوئے،جن میں سے 186 حادثات موٹر بائیکس کے ہیں۔228 روڈ ٹریفک حادثات میں 251 لوگ زخمی ہوئے اور ایک شخص اپنی جان کی بازی ہار گیا۔

ریسکیو 1122نے ماہ جنوری میں بھی بہتر رسپانس ٹائم کی روایت کو برقرار رکھا ایوریج رسپانس ٹائم 7 اعشاریہ 4 منٹ رہا اور فائر ایمرجنسیز کا ایوریج رسپانس ٹائم 8 منٹ رہا۔

انجینئر سعید احمد نے کہا کہ پنجاب کمیونٹی سیفٹی ایکٹ کے تحت ضلع کی تمام بلند عمارات جن کی اونچائی 50 فٹ ہے کو چیک کیا گیا اور بلڈنگ سیفٹی کے قوانین کو لاگو کروانے کے لیے ہدایات دی گئیں۔ کمیونٹی سیفٹی پروگرام کے تحت محفوظ معاشرے کے قیام کے لیے ریسکیو کی جانب سے ماہ جنوری میں مختلف سکولز, کالجز اور اداروں میں فرسٹ ایڈ اور فائر سیفٹی کی ٹریننگ کا انعقاد بھی کیا گیا۔

علاوہ ازیں پیشنٹ ٹرانسفر سروس کے تحت مریضوں کو بہتر طبی سہولیات فراہم کرنے کے لئے ضلع جہلم سے کل 128 مریضوں کو راولپنڈی، اسلام آباد، سرگودھا کے ہسپتالوں میں منتقل کیا۔

ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسر نے پورے ماہ میں ریسکیورز کی کارکردگی کو حوصلہ افزاء قرار دیا اور ان کا کہنا تھا کہ ریسکیو1122 کا ادارہ کسی بھی ایمرجنسی یا سانحہ سے نمٹنے کے لئے ہر وقت تیار ہے۔ریسکیو1122 عوام کا ادارہ ہے اور ہم عوام کی فلاح کے لئے کام جاری رکھیں گے۔ ہمارا مقصد عوام میں احساس تحفظ پیدا کرنا ہے۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button