معمولی ورزش بھی کولیسٹرول کی مقدار میں کمی لا سکتی ہے، تحقیق

ایکسیٹر: ایک  نئی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ وہ بچے جو جسمانی طور پر غیر فعال ہوتے ہیں ان کے بعد کی زندگی میں دل کے دورے یا فالج میں مبتلا ہونے کے امکانات زیادہ ہوتے ہیں، لیکن معمولی سی ورزش سے ان امکانات کو ختم کیا جاسکتا ہے۔

ماہرین کے مطابق بچپن میں سستی اور کاہلی بڑی عمر تک کولیسٹرول کی مقدار میں دو تہائی اضافہ کر سکتی ہے جو نتیجتاً قلبی مسائل اور قبل از وقت موت کا سبب بن سکتی ہے۔

بچپن میں کولیسٹرول کی بلند سطح کو بعد کی زندگی میں قلبی مرض سے ہونے والی قبل از وقت موت کے ابتدائی اشاروں سے جوڑا جاتا ہے۔

لیکن حال ہی میں کی جانے والی ایک تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ معمولی سی جسمانی سرگرمیاں جیسے کہ چلنا یا گھر کے کام کرنا ان خطرات کو یکسر ختم کر سکتی ہیں۔

تحقیق کے نتائج میں بتایا گیا کہ مذکورہ بالا اقسام کی سرگرمیاں معتدل سے سخت جسمانی سرگرمیوں کی نسبت زیادہ مؤثر ثابت ہوسکتی ہیں۔

یونیورسٹی آف ایکسیٹر سے تعلق رکھنے والے تحقیق کے سربراہ ڈاکٹر اینڈریو اگبیج کے مطابق تحقیق کے نتائج ہلکی جسمانی سرگرمیوں کی صحت کے حوالے سے اہمیت کو واضح کرتے ہیں اور یہ بتاتے ہیں کہ یہ سرگرمیاں ابتدائی زندگی میں کولیسٹرول کی مقدار میں اضافے اور ڈسلیپیڈیمیا سے بچانے میں اہم ثابت ہوسکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button