دینہ کی نجی ہاؤسنگ سوسائٹی سے رشوت لینے کے کیس میں فواد چوہدری کی ضمانت منظور

جہلم: فراڈ کیس میں سابق وفاقی وزیر فواد چوہدری کی ضمانت منظور ہوگئی۔

جج اینٹی کرپشن علی نواز نے محفوظ فیصلہ سنایا۔ عدالت نے فواد چوہدری کو 2لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا۔

اینٹی کرپشن نے دینہ میں نجی ہاؤسنگ سوسائٹی سے این او سی کے لیے بھاری رشوت کا الزام لگایا تھا۔

یاد رہے کہ اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ نے تعزیرات پاکستان کی دفعات 162/163 اور اینٹی کرپشن ایکٹ کی دفعہ 5/2/47 کے تحت رواں سال 29 نومبر کو مقدمہ درج کیا تھا۔

سب انسپکٹر عبدالغفار بھٹی کی مدعیت میں درج مقدمے میں سابق وفاقی وزیر فواد چوہدری، ان کے کزن چوہدری فوق شیرباز سمیت ضلع کونسل جہلم کے سابق ڈسٹرکٹ افسر پلاننگ محمد داؤد اور سیکریٹری ڈسٹرکٹ پلاننگ اینڈ ڈیزائن کمیٹی جہلم کو بھی نامزد کیا گیا۔

مقدمہ کے متن کے مطابق ملزمان نے کرپشن کا ارتکاب کرتے ہوئے جی ٹی روڈ دینہ پر واقع نجی ہاؤسنگ سوسائٹی سے رشوت کی مد میں مجموعی طور پر 2 کروڑ روپے وصول کئے جس کے لئے فوق شیرباز چوہدری کے ذریعے سوسائٹی سے تمام سرکاری امور کی انجام دہی، زمین کی خریداری اور این او سی کی منظوری لے کردینی تھی۔

واضح رہے کہ اینٹی کرپشن پولیس نے فواد چوہدری کو گرفتار کرکے جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیجا تھا جبکہ چند روز قبل نیب نے بھی فواد چوہدری کو حراست میں لے لیا تھا۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button