16 فروری سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ ہوگا یا کمی؟

گزشتہ سال کے اختتام پر عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمتوں میں نمایاں کمی کے باعث برینٹ خام تیل کی قیمت 73 ڈالر فی بیرل تک گر گئی تھی، اس سے قبل اکتوبر میں خام تیل کی قیمت 94 ڈالر فی بیرل تک پہنچ گئی تھی، تاہم اب ایک مرتبہ پھر اضافے کے بعد خام تیل کی قیمت 81 ڈالر فی بیرل ہو گئی ہے۔

دوسری جانب پیٹرولیم ڈویژن نے رواں مالی سال کے لیے پیٹرولیم لیوی کی وصولی کا ہدف 869 ارب روپے مقرر کیا ہے۔

پاکستان میں ڈالر کی قیمت میں کمی کا سلسلہ بھی جاری ہے اور امریکی کرنسی کی قدر گزشتہ 15 دنوں میں 280 روپے سے کم ہو کر 276 روپے ہوگئی ہے، ڈالر کی قیمت میں کمی اور خام تیل کی قیمت میں 2 ڈالر اضافے کے پیش نظر تجزیہ کاروں کے مطابق پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ردوبدل نہیں کیا جائے گا یا پھر 5 روپے فی لیٹر کی کمی ہوسکتی ہے، تاہم قیمتوں کا حتمی فیصلہ وزارت خزانہ 15 فروری کی شب اوگرا کی سمری کی روشنی میں کرے گی۔

گزشتہ ماہ جنوری میں ڈالر کی قدر میں کمی اور عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمتوں میں اضافے کے باعث پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی متوقع تھی۔ حکومت نے عوامی امیدوں پر پورا اترنے کی کوشش کرتے ہوئے 15 جنوری کو پیٹرول کی قیمت میں 8 روپے فی لیٹر کی کمی کی تھی، اور پھر 31 جنوری کو برطانوی برینٹ خام تیل کی قیمت بڑھنے کے باعث پیٹرول کی قیمت میں 13 روپے 55 پیسے اضافہ کیا تھا۔

معاشی تجزیہ کاروں کے مطابق جنوری میں ڈالر کی قدر میں کمی کا سلسلہ جاری رہا، گزشتہ سال ستمبر سے پاکستان میں روپے کی قدر مستحکم اور ڈالر سستا ہو رہا تھا، انٹربینک میں ڈالر307 روپے سے کم ہو کر 23 اکتوبر کو 275 روپے کا ہو گیا تھا، گزشتہ ماہ سے ایک مرتبہ پھر سے ڈالر کی قیمت میں کمی کا سلسلہ جاری ہے جو 289 روپے سے کم ہو کر 276 روپے ہوگئی ہے۔

حکومت نے آخری مرتبہ 31 جنوری کو جب پیٹرول کی قیمت میں 13 روپے 55 پیسے کا اضافہ کیا تھا، اس وقت انٹر بینک ڈالر کی قیمت 280 روپے تھی جو اب 4 روپے کی کمی کے بعد 276 روپے ہو گئی ہے، 31 جنوری کو خام تیل کی قیمت 80 ڈالر فی بیرل تھی جو کہ اب بھی اسی کے آس پاس ہے۔

پیٹرولیم لیوی

پیٹرولیم ڈویژن کے مطابق گزشتہ مالی سال میں پیٹرولیم لیوی کی مد میں 580 ارب روپے وصول کیے گئے تھے جبکہ رواں مالی سال کے لیے پیٹرولیم لیوی کی مد میں وصولی کا ہدف 869 ارب روپے مقرر کیا گیا ہے جب کہ آئی ایم ایف نے لیوی سے وصولی کا تخمینہ 918 ارب روپے لگایا ہے۔

اس وقت پیٹرول اور ڈیزل پر 60، 60 روپے فی لیٹر لیوی وصول کی جا رہی ہے، واضح رہے کہ اس وقت پیٹرول کی قیمت 272 روپے 89 پیسے فی لیٹر ہے جبکہ ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت 278 روپے 96 پیسے فی لیٹر ہے۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button