پاکستانی نوجوانوں کی اکثریت بیرون ملک نہیں جانا چاہتی، امریکی ادارے کا سروے

پاکستانیوں کی اکثریت میں خراب حالات کے باوجود ملک میں رہنے کو ترجیح دے رہے ہیں، وائس آف امریکہ کے سروے نے سوشل میڈیا صارفین کی توجہ حاصل کر لی ہے۔

پاکستان میں ان دنوں جہاں سیاسی گرما گرمی اور الیکشن سے قبل غیر یقینی کی صورتحال جہاں عوام میں افراتفری کی صورتحال پیدا کر رہی ہے، وہیں اب اس سروے نے نوجوانوں کی توجہ بھی خوب سمیٹ لی ہے۔

وائس آف امریکہ کی جانب سے یہ سروے ملٹی نیشنل ادارے اپسوس کے ذریعے کرایا گیا تھا، جس میں 18 سے 34 برس کے نوجوانوں کی جانب سے شرکت کی گئی، جبکہ سوال بھی یہی کیا گیا کہ وہ بیرون ملک منتقل ہونا چاہتے ہیں؟

جس پر ہر 4 میں سے 3 نوجوانوں نے بیرون ملک جانے کے بجائے اپنے ہی ملک میں رہنے کو ترجیح دی۔ جبکہ 23 فیصد ایسے بھی تھے جنہوں نے ملک سے باہر رہنے کی خواہش کا اظہار کیا۔ دلچسپ بات یہ بھی ہے کہ بیرون ملک رہنے کی خواہش کا اظہار کرنے والوں میں 26 فیصد مرد جبکہ 18 فیصد خواتین تھیں۔

جبکہ 18 سے 24 سال کے نوجوانوں کی اکثریت یعنی 35 فیصد نے اعلیٰ تعلیم کے حصول کے لیے بیرون ملک جانے کو ترجیح دی، شہری علاقوں سے تعلق رکھنے والے 29 فیصد جبکہ دیہی علاقوں سے 18 فیصد نوجوانوں نے بیرون ملک جانے کی خواہش کا اظہار کیا۔

پاکستان کے تمام صوبوں میں سب سے کم بلوچستان کے نوجوان تھے جنہوں نے اپنے ملک میں رہنے کو ترجیح دی۔

جبکہ سروے کے مطابق 41 فیصد نوجوان سعودی عرب، جبکہ 12 فیصد کینیڈا جانے کو ترجیح دے رہے تھے۔ 7،7 فیصد آسٹیلیا اور ترکیہ اور 6 فیصد اٹلی جانا چاہتے ہیں۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button