جہلم: گورنمنٹ کالجز و سکولز میں کلریکل سٹاف اور ٹیچرز کی کمی، خالی آسامیوں پر تعیناتیاں التوا کا شکار

جہلم: محکمہ ہائر ایجو کیشن و سکولز ڈیپارٹمنٹ کی بے حسی، گورنمنٹ کالجز و سکولز میں کلریکل سٹاف اور ٹیچرز کی کمی، خالی آسامیوں پر تعیناتیاں التوا کا شکار، کالجز و سکولز کے دفتری امور بْری طرح متاثر، کلرکوں کی ذمہ داریاں درجہ چہارم کے ملازمین اورگریڈ 17 تا20 کے اساتذہ انجام دینے پر مجبور ہیں۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ ہائر ایجو کیشن ڈیپارٹمنٹ کی بے حسی کا یہ حال ہے کہ ضلع جہلم میں موجود گورنمنٹ کالجز و سکولز میں کلرکوں اور ٹیچرز کی درجنوں آسامیاں تقرری کی منتظر ہیں ، کلرکس و ٹیچرز نہ ہونے کی وجہ سے سکولز و کالجز کے نتائج بری طرح متاثر ہو چکے ہیں۔

دوسری جانب کلرکوں کی ذمہ داریاں درجہ چہارم کے ملازمین اور اساتذہ کرام سر انجام دے رہے ہیں جس کے باعث طلباء و طالبات کو حصولِ تعلیم کے لئے سخت مشکلات کا سامنا ہے جبکہ ٹیچرز اور درجہ چہارم کے ملازمین شدید ذہنی کیفیت کے ساتھ ساتھ چڑ چڑے پن کاشکار ہو رہے ہیں۔

بروقت کام نہ ہونے سے سکولوں و کالجوں میں زیر تعلیم طلباء و طالبات کو شدید دشواریوں کا سامنا کرنا پڑ رہاہے جبکہ بڑے کالجز و سکولز میں کلریکل سٹاف کی منظور شدہ آسامیاں کم ہونے کے باعث عملہ کی کمی کی وجہ سے بھی کام کا بوجھ بہت زیادہ ہو چکا ہے۔

جہلم کی عوامی ،سماجی ، رفاعی اور فلا حی تنظیموں کے عمائدین نے محکمہ ہائر ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کی اس بے حسی پرتشویش کا اظہا رکرتے ہوئے ارباب اختیار سے مطالبہ کیاہے کہ پہلی مرتبہ کالجز و سکولز میں کلریکل سٹاف کی خالی آسامیوںپر درجہ چہارم کے چوکیدار ، مالی ، سویپر اور نائب قاصد ذمہ داریاں ادا کر رہے ہیں جو کہ متعلقہ محکموں کے ارباب اختیار کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔

شہریوں کا کہناہے کہ حکومت کو چاہیے کہ کلریکل سٹاف کے امور انجام دینے والے درجہ چہارم کے ملازمین کو اپ گریڈ کرکے درجہ چہارم کے نئے ملازمین کو بھرتی کیا جائے تاکہ کالجز سکولوں میںزیر تعلیم طلباء و طالبات کے امور احسن طریقے سے انجام دیئے جا سکیں۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button