انتخابی فہرستوں کے حوالے سے الیکشن کمیشن نے وضاحت جاری کردی

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے انتخابی فہرستیں ویب سائٹ پر شائع نہ کرنے کے حوالے سے وضاحت جاری کردی ہے۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے اپنی پریس ریلیز میں کہا ہے کہ انتخابی فہرستوں کو الیکشن کمیشن کی ویب سائٹ پر شائع نہ کرنے کی خبرغلط ہے۔

الیکشن کمیشن نے کہا ہے کہ الیکشنز ایکٹ 2017 کی سیکشن 79 اور الیکشن رولز 2017کے رول 45 میں انتخابی فہرستوں کے حصول کا باقاعدہ طریقہ کار دیا گیا ہے، رولز کے تحت حتمی انتخابی فہرستوں کی سافٹ و ہارڈ کاپی حاصل کرنے کے لیے مکمل تفصیل موجود ہے۔

ای سی پی کا کہنا ہے کہ انتخابی فہرستیں ویب سائٹ پر اپلوڈ کرنے کی قانون میں کوئی شق نہیں ہے، ووٹروں کا ذاتی ڈیٹا (جس میں ان کانام ، شناختی کارڈ نمبر، والد کا نام اور تصویر) ہوتا ہے، یہ ڈیٹا ریاست مخالف تنظیمیں اپنے مقاصد کے لیے استعمال کرسکتی ہیں۔

الیکشن کمیشن نے وضاحت میں کہا ہے کہ عوام کی سہولت کے لیے الیکشن کمیشن نے 8300 پر میسیج کرنے کی سہولت دی ہوئی ہے تاکہ وہ اپنے نام کا اندراج اور دیگر کوائف چیک کرسکیں، ڈٰیٹا کو سائبر اٹیک سے محفوظ رکھنا بھی مقصود ہے، انتخابی فہرستیں مذہب کے بجائے قانون کی بنیاد پر مرتب کی جاتی ہیں۔

’ امیدوار یا کوئی دوسرا شخص الیکشن کمیشن سے انتخابی فہرستوں کی حسب ضابطہ کاپیاں حاصل کرسکتا ہے۔‘

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button