جہلم میں الیکشن کے دوران جیت اور ہار کی آنکھ مچولی، کبھی ایک کیمپ میں جشن، کبھی دوسرے میں خوشی رہی

جہلم: جنرل الیکشن 2024 کے نتائج کے دوران جیت اور ہار کی آنکھ مچولی، کبھی ایک کیمپ میں مٹھایاں اور جشن ، کبھی دوسرے کیمپ میں خوشی ،لمحہ بہ لمحہ صورتحال تبدیل ہوتی رہی۔ موبائل سرو س بحال ہونے کے بعد دن بھر لوگ ایک دوسرے سے الیکشن کے نتائج کے بارے میں دریافت کرتے رہے۔

8 اور 9 فروری کی درمیانی شب حلقہ این اے 60 جہلم ون سے پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ آزاد بیرسٹر حسن عدیل اور این اے 61 جہلم ٹو سے پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ آزاد امیدوار کرنل (ر) شوکت مرزا کی جیت کے جشن منائے گئے جبکہ دوسرے روز حلقہ این اے 60 سے بلال اظہر کیانی جبکہ این اے 61 جہلم ٹو سے چوہدری فرخ الطاف کی جیت کی خبریں گردش کرنے لگیں۔

پی ٹی آئی کے بعد (ن) لیگ کے کیمپوں میں جشن شروع کر دیئے گئے اور بعد ازاں ریٹرننگ آفیسرز کے دفاتر سے رزلٹ بھی جاری ہو گئے۔

اسی طرح پی پی 24 میں پاکستان تحریک انصاف کے حمایت یافتہ سید رفعت زیدی ، پی پی 25 سے یاسر محمود قریشی اور پی پی 26 سے برگیڈئیر(ر) مشتاق احمد کے سپورٹرز آزاد امیدواروں کی جیت کی خوشیاں مناتے رہے۔

قابل ذکر بات یہ ہے کہ مسلم لیگ ن ضلع جہلم سے پاکستان مسلم لیگ ن کے نامزد امیدواران اور آئی پی پی کے نامزد امیدوار نے اپنی شکست کو تسلیم کرتے ہوئے سوشل میڈیا پر کامیاب ہونے والے آزاد امیدواروں کو مبارکباد پیش کی ۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button