اکثر باڈی بلڈرز سپلیمنٹس سے جُڑے بانجھ پن کے خطرات سے ناواقف

برمنگھم: ایک نئی تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ باڈی بلڈرز کی اکثریت اس بات سے بے خبر ہے کہ جو پروٹین سپلیمنٹس وہ استعمال کرتے ہیں وہ ان میں بانجھ پن کے مختلف قسم کے خطرہ پیدا کرسکتا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق برطانوی محققین نے اپنی تحقیق میں پایا کہ پانچ میں سے چار جِم کے شوقین 79 فیصد مردوں نے اطلاع کہ وہ اپنے فٹنس پلان کے حصے کے طور پر پروٹین سپلیمنٹس کا استعمال کرتے ہیں جبکہ دوسری جانب 14 فیصد نے اس بات کا اعتراف کیا کہ وہ سپلیمنٹس، جن میں خواتین کے ہارمون ایسٹروجن کی سطح زیادہ ہوتی ہے۔ وہ مردوں میں بانجھ پن کا خطرہ پیدا کرسکتے ہیں۔

برطانیہ کی برمنگھم یونیورسٹی میں بانجھ پن کا مطالعہ کرنے والے اسسٹنٹ پروفیسر اور سرکردہ محقق موریگ گلیگر نے وضاحت کی کہ سپلیمنٹس میں بہت زیادہ ایسٹروجن مردوں کے نطفے کی مقدار اور معیار سے منسلک مسائل پیدا کر سکتا ہے۔

گلیگر نے مزید کہا کہ باالفاظ دیگر یہ بھی کہا جاسکتا ہے کہ پروٹین سپلیمنٹس لینے والے مرد غیر ارادی طور پر نقصان دہ اسٹیرائڈز کا استعمال کر رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button