جہلم میں کھانے پینے کی اشیاء کے من مانے نرخ وصول کئے جانے لگے

جہلم: ضلعی انتظامیہ سمیت پرائس کنٹرول مجسٹریٹس کی عدم توجہی کے باعث شہر سمیت ضلع بھر میں مختلف کھانے پینے کی اشیاء کے من مانے نرخ وصول کئے جارہے ہیں۔

بازاروں میں صورتحال یہ ہے کہ ایک ریڑھی پر فروٹ اور سبزیاں اگر 200 روپے کلو میں فروخت ہو رہی ہیں تو اس سے چند قدم کے فاصلے پر و ہی فروٹ اور سبزیاں 250 روپے کلو میں فروخت کی جارہی ہیں ،مارکیٹ کمیٹی کا عملہ صرف نرخ نامے فروخت کرنے تک محدود ہو کر رہ گیا ہے۔

مارکیٹ کمیٹی کے ملازمین صبح سویرے فوٹو اسٹیٹ مشینوں سے ریٹ لسٹیں نکلوا کر فی ریڑھی اور دکاندار وںسے 20 روپے کے عوض ریٹ لسٹ تھما دیتے ہیں پر ان ریٹ لسٹوں پر کہیں بھی عملدرآمد نظر نہیں آ رہا۔

ڈپٹی کمشنر ، اسسٹنٹ کمشنر ، پرائس کنٹرول مجسٹریٹس صرف فوٹوسیشن اور اخباری خبروں میں مہنگائی کو کنٹرول کرنے تک محدود ہیں جس کا خمیازہ غریب ،سفید پوش، متوسط طبقہ مہنگی اشیاء خریدنے کی صورت میں بھگت رہے ہیں کوئی بھی چیز سرکاری نرخ نامے پر فروخت نہیں کی جارہی۔

شہریوں نے نگران وزیراعلیٰ پنجاب، چیف سیکرٹری پنجاب، ایڈوائزر صوبائی محتسب پنجاب جہلم سے نوٹس لینے اور سرکاری نرخوں پر معیاری اشیاء خوردونوش فروخت کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button