پاکستانی جماعتیں منشور میں مسئلہ کشمیر کو شامل کریں، چوہدری عظیم

وٹفورڈ: کشمیر ی رہنما اور کشمیر رابطہ کمیٹی کے سابق صدر چوہدری محمد عظیم نے پاکستان کی سیاسی و مذہبی جماعتوں سے اپیل کی ہے کہ وہ پاکستان کے انتخابات میں مسئلہ کشمیر کو بھی اپنے منشور میں شامل کر کے مظلوم کشمیریوں کے حق میں آواز بلند کریں۔

چوہدری محمد عظیم نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ یہ انتہائی افسوس و مایوس کن بات ہے کہ پاکستان میں عام انتخابات میں کسی بھی جماعت نے اپنی پالیسی و منشور میں مسئلہ کشمیر کو شامل نہیں کیا ،انہوں نے سوال کیا کہ کشمیر کو پاکستان کی شہ رگ کہنے والی جماعتیں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم پر کیوں خاموش ہیں۔

چوہدری محمد عظیم نے کہا کہ یہ پاکستان کی سیاسی جماعتوں کا دوہرا معیار ہے۔ کشمیر پر پاکستان کی حکومت اور سیاسی جماعتوں نے دوہرا معیار قائم کر رکھا ہے، آزاد کشمیر میں پاکستان نواز جماعتیں قائم کر رکھی ہیں جو بھی جماعت پاکستان میں حکومت بناتی ہے اسی جماعت کی آزاد کشمیر میں حکومت بن جاتی ہے، تحریک آزادی کشمیر پر ان جماعتوں نے کشمیر ی عوام کو ٹرک کی بتی کے پیچھے لگا رکھا ہے، مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے کچھ نہیں کیا جارہا۔

انہوں نے کہا کہ آزاد کشمیر حکومت تسلیم نہ ہونے کی وجہ سے بھارت نے آزاد کشمیر کے معاملات میں مداخلت شروع کردی ہے۔ بھارت نے پاکستان میں برطانوی ہائی کمشنر کے دورہ میر پور آزاد کشمیر کو بھارت کے اندرونی معاملات میں مداخلت قرار دیا، بھارت نے یہ دعویٰ کیا کہ آزاد خطہ بھارت کا حصہ ہے جس پر وزارت خارجہ پاکستان نے بھارتی وزارت خارجہ کے بیان پر ردعمل کا اظہار نہیں کیا اور نہ پاکستان کی سیاسی جماعتوں نے بھارت کے اس منفی رویئے پر کوئی احتجاج کیا۔

چوہدری محمد عظیم نے کہا کہ کشمیر ایک متنازع ریاست ہے، اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق کشمیر کے دونوں اطراف انسانی حقوق کی تنظیموں، غیر ملکی سفیروں، میڈیا اور کشمیر کے دونوں اطراف عوام کو آنے جانے پر کوئی پابندی نہیں ہونی چاہئے۔ بھارت کا یہ دعویٰ مضحکہ خیز ہے کہ غیر ملکی سفیر کشمیر کا دورہ نہیں کر سکتے۔

چوہدری محمد عظیم نے کہا کہ حکومت برطانیہ پر ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ برطانوی ہائی کمشنر کے دورہ میر پور پر لندن میں بھارتی ہائی کمشنر کو بلا کر احتجاج کرے۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button