جہلم میں محکمہ انہار کی اراضی و سرکاری رقبہ جات پر قبضے کا انکشاف

جہلم: محکمہ انہار کی اراضی و سرکاری رقبہ جات پر قبضے ہونے کا انکشاف جبکہ متعلقہ سٹیٹ افسران کی پر اسرار خاموشی سے سرکار کو کروڑوں روپے کے نقصان کا خدشہ ، شہریوں نے سیکرٹری انہار سے نوٹس لینے کا مطالبہ کردیا۔

ذرائع کے مطابق جہلم میں محکمہ انہار نے افسران کے قیام کے لیے سرکاری بنگلہ جات بنائے ،جن میں افسران سمیت دیگر ملازمین کی رہائش کا بندوبست کیا گیا جبکہ ان بنگلہ جات اور سرکاری رہائش گاہوں اور نہر کے کناروں پر قیمتی اراضی پر محکمہ انہار کے افسران کی سرپرستی میں لوگوں نے قبضے کرکے پختہ تعمیرات شروع کررکھی ہیں۔

اس طرح محکمہ انہار کے افسران و اہلکار لوگوں کے ساتھ معاملات طے کرکے محکمہ انہار کی قیمتی اراضی پر قبضے کروا کر اس کے عوض بھاری رقوم وصول کررہے ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ایس ڈی او محکمہ انہار کی سرکاری رہائش گاہ جو کہ منگلا میں واقع ہے اور محکمہ انہار کی قیمتی اراضی جو کہ جہلم اپر اور جہلم لوئر کے دونوں کناروں پر واقع ہے محکمہ کے افسران کی سرپرستی کیوجہ سے لوگوں نے قبضے کرکے پختہ تعمیرات شروع کررکھی ہیں جبکہ بیشتر مقامات پر دکانداروں نے محکمہ کے افسران و اہلکاروں کے ساتھ معاملات طے کرنے کے بعد عارضی اور مستقل بنیادوں پر دکانیں تعمیر کرنی شروع کررکھی ہیں۔

شہریوں نے سیکرٹری محکمہ انہار ، ایڈوائزر محتسب اعلیٰ پنجاب جہلم سے نوٹس لینے اور محکمہ انہار کی قیمتی اراضی واگزار کروانے کا مطالبہ کیاہے تاکہ سرکاری اراضی کو محفوظ بنایا جا سکے۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button