عام انتخابات: ضلع جہلم میں انتخابی مہم کی روایتی گہما گہمی شروع نہ ہو سکی

جہلم: ضلع کی2 قومی اور3 صوبائی اسمبلی کی نشستوں پر 8 فروری کو ہونے والے انتخابات کے لئے انتخابی مہم شروع ہوگئی۔

جلسوں اور بڑی کارنر میٹنگز کی بجائے تمام سیاسی جماعتوں کے امیدوار چھوٹی چھوٹی کارنر میٹنگز اور ڈور ٹو ڈور رابطہ مہم شروع کر دی ہے، تحریک انصاف کے امیدواروں نے بھی سیاسی انگڑائی لیتے گلی محلوں بازاروں میں مہم کا آغاز کر دیا ہے۔

شہر بھر کی گلیوں بازاروں چوراہوں ،سڑک کنارے تمام جماعتوں کے امیدواروں کے بینرز پینافلیکس آویزاں کر دیئے گئے ہیں ،امیدواروں نے گھر گھر انتخابی پمفلٹ کی تقسیم بھی شروع کر دی ہے ، گلی محلوں میں سیاسی جماعتوں کے امیدواروں کے انتخابی دفاتر بھی کھلنے شروع ہو چکے ہیں۔

بعض امیدواروں کے انتخابی دفاتر فنگشنل کر دیئے گئے ہیں، جن میں رات گئے تک چائے ، قہوہ، مونگ پھلی،بھنے چنے کے ادوار بھی چلے رہے ہیں۔ شہر بھر میں سیاسی تھڑے بھی آباد ہونے لگے ہیں، قومی انتخابات میں اب صرف 16 دن باقی رہ گئے ہیں تاہم ابھی تک روایتی انتخابی مہم کی گہما گہمی شروع نہیں ہو سکی۔

گزشتہ انتخابات کی نسبت 30 سے 40 فیصد انتخابی سرگرمیوں کا آغاز ہی ہوا ہے ابھی تک شہر بھر میں گاڑیوں موٹر سائیکلوں پر کسی سیاسی جماعت کے پرچم دکھائی نہیں دیتے اور نہ ہی ابھی تک ووٹرز نے گھروں کی چھتوں پر سیاسی جماعتوں کے جھنڈے لگائے ہیں۔

امیدواروں کے ور کرز نے الیکشن کمیشن سے ووٹرز لسٹیں حاصل کر کے ووٹ پرچیاں گھر گھر پہنچانے کیلئے ووٹ پرچیاں تیار کرنا شروع کررکھی ہیں ، یہ ووٹ پرچیاں یکم فروری سے گھر گھر تقسیم کی جائیں گی۔ جن میں ووٹرز کو پولنگ اسٹیشنز بابت بتایا جائے گا۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button