مسلم لیگ (ن) کو امیدواروں کے چناؤ میں شدید مشکلات کا سامنا

جہلم: آئندہ عام انتخابات کیلئے مسلم لیگ (ن) کی ٹکٹوں کی تقسیم کے معاملہ پر مسلم لیگ (ن) کو امیدواروں کے چناؤ میں شدید مشکلات کا سامنا ہے۔

پارٹی ذرائع کے مطابق پاکستان مسلم لیگ ق ، استحکام پاکستان پارٹی کے ساتھ سیٹ ایڈجسمنٹ اور الیکٹیبلزکی شمولیت سے پرانے لیگی مقامی رہنماؤں اور امید واروں میں ناراضگی کااظہار کیا جارہا ہے۔

پارٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ لیگی رہنماؤں اور امیدواروں نے موقف اختیار کیا ہے کہ مضبوط امیدواروں کی موجودگی کے باوجود مسلم لیگ (ن) اتحادیوں اورالیکٹیبلزکوٹکٹیں دینا چاہتی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پارٹی کی جانب سے ٹکٹوں کی ممکنہ تقسیم پر مقامی لیگی رہنما اور سابق ایم این ایز و ایم پی ایز پارٹی قیادت سے شدید نالاں نظر آتے ہیں، اس حوالے سے مسلم لیگ (ن) کی قیادت ممکنہ طور پر ناراض ہونے والے اراکین کو منانے کا فارمولہ طے کرلیا ہے۔

پارٹی ذرائع کے مطابق پہلے مرحلے میں سیٹ ایڈ جسٹمنٹ والے حلقوں کے مضبوط مقامی لیگی امیدواروں کو کسی قریبی عزیزہ کی مخصوص نشست پر نامزدگی کی جائے گی، دوسرے مرحلے میں لیگی رہنماؤں کو ایوان بالا سینٹ میں ایڈ جسٹ کرنے کا پلان بھی مرتب کیا گیا ہے۔

پارٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ تیسرے مرحلے میں ناراض لیگی رہنماؤں کو وزیر اعظم ،یا وزیر اعلیٰ کے مشیران یا معاونین خصوصی مقرر کیا جائے گا،ٹکٹ سے محروم رہ جانے والے لیگی رہنماؤں کو چوتھے مرحلے میں سرکاری محکموں کی سر براہی بھی دی جائے گی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پانچویں مرحلے میں بچ جانے والے لیگی رہنماؤں کو آئندہ بلدیاتی اداروں میں سربراہی سے نوازا جائے گا، ٹکٹوں سے سے محروم ہوکر ممکنہ طور پر ناراض ہونے والے لیگی رہنماؤں کو منانے کے فارمولے کی منظوری پارٹی کی اعلیٰ قیادت کی جانب سے دی جائے گی۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button