جدید تعلیم و تربیت حاصل کرکے ہی ترقی کے منازل طے کیے جاسکتے ہیں، جلیل عباس جیلانی

برسلز: پاکستان کے نگران وزیر خارجہ جلیل عباس جیلانی نے یورپین دارالحکومت برسلز کے اپنے دورے کے دوران رائل انسٹی ٹیوٹ برائے بین الاقوامی تعلقات ایگمونٹ انسٹیٹیوٹ (EgmontInstitute) میں مختلف بین الاقوامی اور یورپی اداروں کے سرکردہ سکالرز اور ممتاز ماہرین تعلیم سے خطاب کیا۔

اس موقع پر وزیر خارجہ نے ساؤتھ ایشیا میں علاقائی استحکام، مستقبل کے امکانات کے موضوع پر ایک پرامن اور خوشحال خطے کے لیے سامعین کے سامنے اپنے وژن کا اشترک اکرتے ہوئے کہا کہ جدیدزمانے کے تقاضوں کے مطابق تعلیم و تربیت حاصل کرکے ہی ترقی کے منازل طے کیے جاسکتے ہیں۔

اپنی گفتگو کے دوران وزیر خارجہ جیلانی نے جن دیگر اہم موضوعات پر روشنی ڈالی ان میں معاشی تعاون اور علاقائی روابط کو فروغ دینا، جنوبی ایشیا میں دیرپا امن کے لیے جموں و کشمیر کے دیرینہ تنازع کا حل، جنوبی ایشیا میں امن اور استحکام کے لیے کوششوں کو مضبوط بنانا ، جغرافیائی سیاسی مقابلہ اور خطے میں اتحاد سے گریز کرتے ہوئے متصادم بلاک بنانا شامل ہے۔

علاوہ ازیںنگران وزیر خارجہ جلیل عباس جیلانی اور بلجیم کی وزیر خارجہ حدجہ لہبیب کے درمیان ملاقات ہوئی ہے۔ اس ملاقات میں دونوں وزرائے خارجہ نے پاکستان اوربلجیم کے درمیان دوطرفہ تعلقات کا جائزہ لیا اور ان کے مثبت انداز میں آگے بڑھنے پر اطمینان کا اظہار کیا۔

ملاقات میں تجارت، تعلیم، عوام سے عوام کے رابطوں میں تعاون پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ جبکہ دوطرفہ تعلقات کو مزید مضبوط بنانے کے لیے مسلسل رابطوں اور تعاون کی اہمیت پر اتفاق کرتے ہوئے باہمی خوشحالی کے لیے تعاون کی نئی راہیں تلاش کرنے کی اہمیت پر زور دیا گیا۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button