برطانوی معاشرے میں اسلامو فوبیا بڑھتا جارہا ہے، حمزہ یوسف

گلاسگو: اسکاٹ لینڈ کی حکومت کے سربراہ حمزہ یوسف نے کہا ہے کہ برطانوی معاشرے میں اسلامو فوبیا اب بھی ایک وبائی مرض کی طرح ہے جوکہ وقت کے ساتھ ساتھ بدتر ہورہا ہے اور ایک باقاعدہ نظام کی طرح اس کی معاشرے میں گہری جڑیں ہیں۔

ایک ٹی وی کےپروگرام میں حمزہ یوسف سے جب معاشرے کے سیاسی منظرنامے کے بارے میں پوچھا گیا جہاں پر کئی مسلم مسلمان اعلیٰ عہدوں پر فائز ہیں، جن میں لندن کے میئر صادق خان، اسکاٹش لیبر پارٹی کے سربراہ انس سرور جن کے والد محمد سرور برطانوی پارلیمنٹ کے پہلے مسلم نژاد ممبر تھے اور ان کے بارے میں حمزہ یوسف نے بتایا کہ سیاست کے میدان میں آگے بڑھنے کے لیے چوہدری محمد سرور ہمیشہ ان کے لیے حوصلے اور ترغیب کا باعث بنے ہیں، وزیراعظم رشی سو ناک اگرچہ مسلمان نہیں لیکن وہ بھی نسلی اقلیتوں سے ہیں۔

حمزہ یوسف کا کہنا تھا کہ اس ملک میں بعض افراد ایسے ہیں جو سب سے پہلے ہماری جلد کا رنگ اور مذہب دیکھتے ہیں۔ حمزہ یوسف نے اسکاٹش حکومت کا سربراہ بنتے ہی اپنی سرکاری رہائش گاہ بیوٹ ہائوس میں نماز پڑھتے ہوئے ایک فوٹو شوٹ کرائی تھی، جس میں وہ اپنی فیملی کے ہمراہ باجماعت نماز ادا کررہے تھے اور اس کے ذریعے انہوں نے معاشرے کو یہ پیغام دیا تھا کہ ان کا مذہب ان کی ایک بہت بڑی ترجیح ہے۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button