برطانیہ کے شہر سٹوک اون ٹرنٹ کی کونسل میں غزہ فلسطین میں جنگ بندی کی قرارداد منظور

سٹوک اون ٹرنٹ/ جہلم: برطانیہ کے شہر سٹوک اون ٹرنٹ کی کونسل کی حکومتی اور اپوزیشن پارٹی نے متفقہ طو ر پر غزہ فلسطین میں جنگ بندی کی قرارد منظور کر لی۔

یہ برطانیہ کی پہلی کونسل ہے جس نے متفقہ طور پر قرار داد منظور کی، اس کا کریڈٹ دونوں پارٹیوں کی لیڈر شپ اور خصوصی طور پر برطانیہ میں پہلی دفعہ دوسری بار لارڈ مئیر بننے والے کونسلر ماجد خان اور کونسلر جاوید نجمی کو جاتا ہے۔

قرارداد کونسل لیڈر Jane Ashworth نے پیش کی اور کنزیرٹیو پارٹی کے کونسلر فیصل حسین نے اسکی مکمل تائید کی جسے متفقہ طور پر منظور کر لیا گیا۔ قرار داد میں کہا گیا کہ سات اکتوبر کو حماس کے حملے میں کئی معصوم جانیں ضائع ہوئیں، اسرائیل کی طرف سے فوجی جوابی کارروائیوں کے نتیجے میں مزید جانیں ضائع ہو رہی ہے۔

غزہ کے شہریوں کے لئے انسانی ہمدردی کی بنیاد پر فوری جنگ بندی بہت ضروری ہے، اب تو مرنے والوں کی تعداد کی ہزاروں میں ہو گئی ہے۔ ہسپتالوں، سکولوں، ایمبولینسوں اور عبادت گاہوں پر فوری بمباری روکنے کی ضرورت ہے۔ معصوم شہریوں کے لئے کوئی محفوظ جگہ نہیں ہے، ملک بھر میں ہزاروں مظاہروں کا بھی مشاہدہ کیا گیا۔

قرار داد کے آخر میں کہا گیا کہ ہمیں مستقل جنگ بندی کا مطالبہ کر کے معصوم شہریوں کی تکالیف کو ختم کرنے کے لئے ووٹ دینے کی ضرورت ہے۔ متفقہ قرار داد کی منظوری کا ماجد خان لارڈ مئیر نے اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ہماری کونسل میں غزہ جنگ بندی کی متفقہ قرار داد پاس ہونے پر بہت خوشی ہوئی۔ قرارداد پاس کروانے میں کونسل لیڈر جین اشورتھ، ڈپٹی لیڈر امجد وزیر، کونسلر جاوید نجمی، نوجوان کونسلر وسیم اکبر اور تمام مسلمان و غیر مسلمان کو نسلرکا اہم کردار ہے۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button