ضلع جہلم میں کھاد کی مصنوعی قلت اور بلیک مارکیٹنگ عروج پر پہنچ گئی

جہلم: ضلع بھر میں کھاد کی مصنوعی قلت اور بلیک مارکیٹنگ عروج پر پہنچ گئی، محکمہ زراعت کے ذمہ داران کھاد بحران پر قابو پانے میں ناکام، گندم کی پیداوار میں غیرمعمولی کمی کا خطرہ لاحق ہو چکا ہے۔

تفصیلات کے مطابق جہلم شہر سمیت ضلع بھر میں کھاد کی مصنوعی قلت اور بلیک مارکیٹنگ عروج پر پہنچ چکی ہے جبکہ محکمہ ذراعت کے متعلقہ افسران کھاد بحران پر قابو پانے میں مکمل طور پر نا کام دیکھائی دیتے ہیں۔

کسانوں کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ یوریا کھا د مقررہ نرخوں سے کئی گنااضافی نرخوں پر فروخت کی جارہی ہے جس کی وجہ سے کسانوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہاہے۔

کسانوں کا کہنا ہے کہ کھاد کی اس مصنوعی قلت اور ذخیرہ اندوزی کے باعث گندم کی پیداوار میں زبردست کمی واقع ہو سکتی ہے۔

یہ بھی پڑھنا مت بھولیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button